PPP,GB election,bilawal bhutto,election commission,voters
15 نومبر 2020 (19:38) 2020-11-15

 اسلام آباد:پاکستان پیپلز پارٹی نے گلگت بلتستان انتخابات میں الیکشن کمیشن پر الزام لگایا ہے کہ وسیع پیمانے پر قوانین کی خلاف ورزیاں کی گئیں مگر الیکشن کمیشن خاموش تماشائی کی طرح دیکھتی رہی۔ پارٹی کے سنیئر رہنما مصطفیٰ نواز کھوکھر نے الزام لگا دیا ہے کہ پی ٹی آئی کے وفاقی وزرا اور ان کے معاونین ووٹ خریدنے کیلئے بولیاں لگاتے رہے جبکہ الیکشن کمیشن نے اس پر کوئی ایکشن نہیں لیا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری کے ترجمان مصطفیٰ نواز کھوکھر نے میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان انتخابات میں نا صرف الیکشن کمیشن ٗ بلکہ سپریم کورٹ کے احکامات کی دھجیاں بھی پی ٹی آئی کے وفاقی وزرا اور ان کے معاونین کی طرف سے مسلسل اڑائی گئیں مگر الیکشن کمیشن نے اس موقع پر کوئی ایکشن نہیں لیا۔

مصطفیٰ نواز کھرکھر نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے رویہ افسوسناک ہے۔  ووٹوں کے خریدنے کیلئے بولیاں لگتی رہیں مگر کسی نے نہ روکا۔ بہت سے پولنگ سٹیشن پر اس بات کی کوشش کی گئی کہ کسی طرح سے پولنگ منسوخ ہو جائے ٗ ووٹروں کی دل شکنی کیلئے مختلف حرکتیں کی گئی ٗ تاخیری حوبے استعمال کئے گیا اور جن حلقوں میں کانٹے کا مقابلہ تھا وہاں پر پولنگ کے عمل کو سست ترین کر دیا گیا۔

انہوں نے الزام لگایا کہ الیکشن کمیشن نے ان تمام شکایات کی نشاندہی کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی ۔ الیکشن کمیشن کی ذمہ داری تھی کہ پولنگ کے عمل کو شفاف بنا کر خود کو تنقید سے بچاتے اور اپنا فرض ادا کرتے ۔


ای پیپر