PML-N, Imran Khan, government, Maryam Nawaz, Gilgit Baltistan elections
کیپشن:   فائل فوٹو
15 نومبر 2020 (14:50) 2020-11-15

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ انشاءاللہ حکومت کو گھر بھیج کر ہی دم لیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اپنے ٹوئٹر پیغام میں مریم نواز کا کہنا تھا کہ جب نواز شریف کی طرح عوام کا منتخب وزیراعظم ہو تو 126 دن کا دھرنا بھی ناکام ہو جاتا ہے۔ مگر جب سلیکٹڈ ملک پر حکمرانی کرے تو محض جلسوں سے ٹانگیں کانپنے لگتی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ جعلی وزیراعظم پر ن لیگ کا اتنا خوف ہے کہ ہر جلسے سے پہلے وہاں کے رہنماوں پر کریک ڈاون شروع ہو جاتا ہے۔

مریم نواز نے واضح کیا کہ جلسے پہلے بھی ہوئے ہیں اور انشاءاللہ ملتان کا جلسہ بھی اپنے مقررہ وقت پر ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ کٹھ پتلی اور سلیکٹڈ حکومت جتنے مرضی اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر لے ن لیگ کے کارکنوں اور رہنما کے جذبے اور حوصلے بلند ہیں اور ہمیشہ رہیں گے۔ نائب صدر ن لیگ نے کہا کہ عبدالغفار ڈوگر صاحب کا جرم یہی ہے کہ وہ سابق وزیراعظم نواز شریف کے بیانیے کا علم بلند کیے ہوئے ہیں۔

ادھر ن لیگ کے رہنما احسن اقبل نے حکومت کو خبردار کیا ہے کہ اگر گلگت بلتستان میں بھی آر ٹی ایس والا نتیجہ نکلا تو اُن کی پارٹی پورے ملک میں حکومت اور دھاندلی کرنے والوں کے خلاف شدید احتجاج کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ عام انتخابات کی طرح ہمیں ڈر ہے کہ گلگت بلتستان میں بھی اُن حلقوں میں پولنگ کا عمل سست کیا جائے گا جہاں ن لیگ کے ووٹ بڑی تعداد میں موجود ہیں۔

لیگی رہنما نے الیکشن کمشنر سے درخواست کی کہ وہ ووٹ کاسٹ کرنے کی رفتار کو تیز کروانے کا حکم جاری کریں۔ گلگت میں نیو نیوز سے خصوصی گفتگو میں احسن اقبال کا کہنا تھا کہ یہاں کی بہادر عوام کو نہ تو خریدا جا سکتا ہے اور نہ ہی انہیں ڈرایا جا سکتا ہے۔ لیگی رہنما نے کہا کہ یہاں کے لوگ صرف انہیں ووٹ دیں گے جنہوں نے عوام کی خدمت کی۔


ای پیپر