سپورٹس کا لیڈرپاکستان کا لیڈر نہیں بن سکتا:زرداری کا دبنگ خطاب
15 نومبر 2018 (16:51) 2018-11-15

بدین:پاکستان پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری نے کہا ہے کہ وہ دن دور نہیں جب طاقتوں کو احساس ہوگا کہ پاکستان صرف عوام کے اصل نمائندے چلاسکتے ہیں۔ پاکستان صرف عوام کے اصل نمائندے چلاسکتے ہیں، آپ کے ہاتھوں سے بنائے ہوئے نمائندوں سے کام نہیں چلتا، انہوں نے تو خود کام نہیں کیا تو کیا پتا کیسے کام چلے گا، یہ کبھی دفتر میں نہیں بیٹھے۔ اسلام آباد کے بابوں پرعوام کو اعتبار نہیں، مجھے پتا ہے کون کون کہاں کہاں مدد کررہا ہے، اسلام آباد والوں کو سوچنا چاہیے انسانی ذات کی بھی کوئی قیمت ہے، یہ پاکستان صرف عوام کے نمائندے ہی چلا سکتے ہیں۔ انہوں نے بدین میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مجھے پتا ہے کون کون کہاں کہاں مدد کررہا ہے۔کاش کسی نے ہماری حکومت کی بھی مدد کی ہوتی۔ ہم کسی کے حق پرڈاکہ نہیں ڈالتے۔ انہوں نے کہا کہ بدین کا ایسا کوئی مسئلہ نہیں جومجھے معلوم نہ ہو۔

وزیراعلی سے بات کی ہے مسئلہ حل ہوجائے گا۔ بدین کے ساتھ بھی ناانصافی ہوئی ہے جنہوں نے بدین کے ساتھ برا کیا ان کو بھی حساب دینا ہوگا۔آصف زرداری نے کہا کہ اسلام آباد والوں کو سوچنا چاہیے انسانی ذات کی بھی کوئی قیمت ہے۔اسلام آباد کو سوچنا چاہیے کہ انسان اور عوام نے پاکستان بنایا تھا۔نہوں نے وزیراعظم عمران خان کا نام لیے بغیر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ پاکستان صرف عوام کے نمائندے چلا سکتے ہیں وہ بھی اصلی نمائندے چلاسکتے ہیں۔ کوئی کھیل کر کرکٹر بن گیا ہے۔ سپورٹس کا لیڈرپاکستان کا لیڈر نہیں بن سکتا۔ چاہے اس کی جتنی بھی مدد کی جائے۔

سابق صدر کاکہنا تھاکہ آج بھی ہمیں موقع دیا جائے تو سب سے بہتر ہماری حکومت رہے گی اور ہماری ہی حکومت سب سے بہتر تھی، کسی کو شک نہیں ہونا چاہیے، آج کسی گاﺅں کے بچے کو بولیں تو وہ بھی بتادے گا ہمارے دور میں کیا بچت تھی اب کتنی ہے۔آصف زرداری نے کہا کہ آج اس لیے اردو میں تقریر کررہا ہوں تاکہ اسلام آباد بھی سنے، انہوں نے کہا کہ ملک میں پیسا بہت ہے لیکن اسلام آباد کے بابوں پرعوام کو اعتبار نہیں۔ ان سے بہتر ہماری حکومت تھی۔ آج گنگا الٹی بہہ رہی ہے ہرچیز میں نقصان ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان حکمرانوں کو حساب دینا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنا چھوڑ دیں۔ ہم پاکستان کے حق پرڈاکہ ڈالنے نہیں دیں گے۔ انشااللہ ہماری جنگ جاری رہے گی۔


ای پیپر