بھارت نے سکھ یاتریوں کو پاکستان آنے سے روک دیا
15 جون 2019 (16:11) 2019-06-15

ممبئی :بھارتی حکومت نے پاکستان میں جوڑ میلا میں شرکت کے لیے سکھ یاتریوں کو لینے کے لیے لاہور سے آنے والی ٹرین کو مسافروں کو لے جانے کی اجازت نہیں دی، جس کے خلاف بڑی تعداد میں سکھ برادری نے اٹاری ریلوے اسٹیشن پر اپنی حکومت کے خلاف احتجاج کیا۔

تفصیلات کے مطابق سکھوں کے مذہبی پیشوا گرو ارجن دیو کی برسی کے موقع پر ہر سال پاکستان میں جوڑ میلا منعقد کیا جاتا ہے جس میں شرکت کے خواہشمند سکھ یاتری ویزا اور سفری دستاویزات کے ساتھ اٹاری ریلوے اسٹیشن پر پھنسے رہے جہاں انہیں خصوصی ٹرین نے لینے کے لیے آنا تھا۔

 گزشتہ روز خصوصی ٹرین صبح 9 بجے واہگہ ریلوے اسٹیشن پر 146 سکھ یاتریوں کو لینے پہنچنی تھی۔پاکستانی انتظامیہ نے بھارت سے بارہا بات چیت کی تاکہ ٹرین کو ان کی ریاستی حدود میں داخل ہو کر یاتریوں کو لاہور لانے کی اجازت مل سکے جہاں سے وہ 10 روزہ جوڑ میلے میں شرکت کے لیے جاسکیں گے۔تاہم افسوس کی بات یہ ہے کہ تقریبا 12 بج کر 40 منٹ پر بھارتی حکام نے بالآخر یاتریوں کو لینے کے لیے جانے والی ٹرین کو ملک میں داخل ہونے کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔

واضح رہے کہ نئی دہلی میں موجود پاکستانی ہائی کمیشن نے 200 بھارتی سکھ یاتریوں کے لیے ویزا جاری کیے تھے۔دونوں ممالک کے مابین ہوئے دو طرفہ سمجھوتے کے تحت پاکستان اس تقریب میں شرکت کے لیے 500 یاتریوں کو ویزے جاری کرسکتا ہے۔


ای پیپر