مطمئن ہونا ۔۔۔ میاں نواز شریف کا ۔۔۔؟
15 جون 2018 2018-06-15

افسر: (ملازمت کے امیدوار سے) ’’تمہارا نام‘‘۔۔۔؟
امیدوار: ’’جی! عبدالرشید اُداس زخمی پردیسی‘‘۔۔۔!
افسر: (غصے سے) ’’مختصر نام بتایا کرتے ہیں؟‘‘۔۔۔!
افسر: (دوسرے امیدوار سے جس کا نام بوٹا تھا) ’’تمہارا نام‘‘ ۔۔۔؟
دوسرا امیدوار: ’’جی بوُ ٹ‘‘۔۔۔
ہم سہمی ہوئی قوم کے افراد ہیں ۔۔۔ مجھے کتے سے ڈر لگتا ہے، پچاس سال سے میں کتے کو ’’ہینڈل‘‘ نہیں کر پایا ۔۔۔ مگر ہر بار کتا مجھے ڈرانے دھمکانے میں کا میاب ہو جاتا ہے۔ گویا میری حالت اس مثال سے آپ پر واضح ہو جائے گی ۔۔۔ یہ لطیفہ ہے ۔۔۔ (سوری) میں آجکل سادہ لطیفے سنانے پر اتر آیا ہوں حالانکہ استاد خادم حسین رضوی کی ’’باتوں‘‘ کے سامنے ’’سادہ لطیفوں‘‘ کا ۔۔۔ کیا مطلب کیا مقصد ۔۔۔؟ بد مزہ ۔۔۔ پھیکے پھیکے؟ ۔۔۔
’’دو آدمی ایک الماری سیڑھیوں کے ذریعے اوپر لے جا رہے تھے لیکن وہ الماری اوپر نہیں جا رہی تھی تنگ آ کر نیچے والے آدمی نے کہا ۔۔۔ ’’لگتا ہے آج ہم کسی صورت بھی اسے اوپر نہیں لے جا سکتے؟‘‘ ۔۔۔
اوپر والے آدمی نے حیرت سے کہا ۔۔۔ ’’اوپر ۔۔۔؟؟!!؟ میں تو سمجھا تھا اسے نیچے لے کر جانا ہے؟‘‘ ۔۔۔
’’ہم‘‘ ۔۔۔ خاص طور پر ہمارے شہر کی تعلیم یافتہ مائیں ۔۔۔ بچوں کو تعلیم ضرور دلوانا چاہتی ہیں ۔۔۔ خاص طور پر F.Sc میں چاہتی ہیں کہ وہ سب سے زیادہ نمبر حاصل کریں ۔۔۔ اوہ ۔۔۔ ’’جی ۔۔۔ ہاں‘‘ ۔۔۔ ڈاکٹر بن کے رہیں ۔۔۔ جیسے تیسے کل صبح بیٹی کو میری بیوی خوب ڈانٹ رہی تھیں ۔۔۔ طعنے دے رہی تھیں ۔۔۔ محلے میں، رشتے داروں میں ڈاکٹر بن جانے والی لڑکیوں کی مثالیں دے کر ’’ڈرا‘‘ رہی تھیں آج تو میں تجھے "Math" کے سارے سوال کروا کے چھوڑوں گی ۔۔۔ بیوقوف بچی صبح پرچہ جو ہے ۔۔۔؟!؟
’’مگر امی ۔۔۔ آپ کو میں چار گھنٹے سے بتانا چاہ رہی ہوں کہ پرچہ تو صبح "Math" کا نہیں ۔۔۔ فزکس کا ہے؟‘‘ ۔۔۔ بچی نے سہمے انداز میں یاد دلایا ۔۔۔؟
حافظ مظفر محسن اور حافظ شفیق الرحمن کچھ باتوں میں ایک پیج پر ہیں ۔۔۔ نہ یقین آئے تو فیس بک دیکھ لیں ۔۔۔ مگر ہم دونوں کا طریقہ کار مختلف ہے، ہم دونوں شہر کے پسماندہ علاقوں میں رہتے ہیں ۔۔۔ مجمع بکھرنے لگے تو ہم آگے بڑھ کر قیادت سنبھال لیتے ہیں، سچ اُگل دیتے ہیں اور دس بارہ نئے دشمن بنا لینے میں کامیاب ہو جاتے ہیں ۔۔۔ جوانی میں شہر کے بڑے جرائم پیشہ لوگ ہم دونوں کو ’’سلام‘‘ کر کے گزرا کرتے تھے ۔۔۔
ملالہ یوسفزئی یا عائشہ گلالئی کے بارے میں میرے نظریات آج بھی مختلف ہیں ۔۔۔ لوگ محفل میں میری وجہ سے خوش ہوتے ہیں کیونکہ میں ضروری نہیں سمجھتا کہ جو بات نوے فیصد لوگوں کو پسند ہے ۔۔۔ میں بھی اُن کی ہاں میں ہاں ملا دوں کہ اس عمل سے مجھے بھی ’’بریانی کی ایک پلیٹ بوٹی والی ۔۔۔ مل جائے گی‘‘؟ ۔۔۔
محترمہ عائشہ گلالئی کا معاملہ اُن کو مزید ’’سنجیدہ اور معتبر‘‘ کرتا چلا جا رہا ہے کیونکہ جس طرح کچھ عرصہ پہلے اُنہوں نے ملک کی تینوں بڑی پارٹیوں کے لیڈروں سے ناگواری کا اظہار کیا اور پھر اپنی ایک علیحدہ پارٹی بنا کر ملک گیر خواتین کے حقوق کی مہم شروع کر دی تھی لیکن ’’اللہ کا شکر‘‘ ہے کہ معاملات جوں کا توں ہی رہے ۔۔۔
پچھلے دنوں بالکل اُسی طرح جس طرح بلیک بیری کا سہارا لیتے ہوئے عائشہ گلالئی نے PTIکے عمران خان پر Harrasment کا جو سنگین الزام لگایا تھا وہ ابھی ہوا میں ’’معلق‘‘ ہے ۔۔۔ ایسا نہ ہو کہ محترمہ عائشہ گلالئی کسی اور ’’پلیٹ فارم‘‘ سے اپنا کیس لڑنے کا ارادہ کر لیں اور پھر جگ ہنسائی ہو ۔۔۔؟! ایسے ہی انہی لائنوں پر ایک ماڈل نے علی ظفر پر بھی Harrasment کا الزام لگایا ۔۔۔ عوام میں یہ موضوع بھی خوب اچھالا گیا اور پھر علی ظفر کی نئی فلم ’’طیفا اِن ٹربل‘‘ مارکیٹ میں آنے والی ہے مجھے لگتا ہے ایسے اسیکنڈل عوام کی طفنن طبع کے لیے بنائے جاتے ہیں ۔۔۔ اچھالے جاتے ہیں ۔۔۔
دفتر میں داخل ہوا تو عاشق حسین ثاقب دفتر کی میز پر سر جھکائے سوچوں میں گم تھا ۔۔۔
میں: عاشق بھائی کیا ہوا؟ ۔۔۔
عاشق: بچے ۔۔۔!
میں: عاشق بھائی کیا مطلب؟! ۔۔۔
عاشق:کل رات میری بیوی کے ہاں ایک ساتھ تین بچے پیدا ہوئے ہیں ۔۔۔
میں: اور کل ملا کے ۔۔۔ گیارہ بچے ہو گئے ۔۔۔ سب لوگ ہنس دےئے اور شور مچ گیا ۔۔۔ لڈو کھلاؤ ۔۔۔ لڈو کھلاؤ ۔۔۔؟
عاشق حسین ثاقب نے پیپر ویٹ اٹھا کر دیوار پر دے مارا ۔۔۔ ظالموں چپ ہو جاؤ ۔۔۔ میں پیٹھی والے لڈو کھا کر زندگی گزار رہا ہوں تم ۔۔۔ لڈو کھلاؤ ۔۔۔ لڈو کھلاؤ ۔۔۔ شور مچا رہے ہو ۔۔۔ آٹھ بچے چیخ چیخ کر کہتے ہیں ۔۔۔ روٹی لاؤ ۔۔۔ روٹی کھلاؤ ۔۔۔ روٹی کھلاؤ ۔۔۔ تین بچے رو رو کر بلک بلک کر خواہش کر رہے ہیں ۔۔۔ ۔۔۔ دودھ لاؤ ۔۔۔ ۔۔۔ دودھ لاؤ ۔۔۔ ؟
چھبیس (26) سال کی عمر میں عاشق حسین ثاقب گیارہ بچوں کا باپ بن گیا ۔۔۔ یہ ظلم ناک خبر سن کر میں نے بھی سر اپنی میز پر رکھ دیا ۔۔۔ پھر ہڑ بڑا کر اٹھ بیٹھا عاشق حسین ثاقب مجھے چھبیس (26) سال کی عمر میں 66 سال کا لگ رہا تھا ۔۔۔ وہ ہمیشہ دہائی دیتا ہے ۔۔۔ دوستو 35 سال کی عمر سے پہلے شادی مت کرنا، مت ماری جائے گی ورنہ ۔۔۔ ویسے اگر دینا پڑ گیا دھرنا تو پھر کیا ڈرنا ۔۔۔ ویسے دل نہیں مانتا کہ بات دھرنے تک پہنچے؟! ۔۔۔ کیونکہ نواز شریف سر گرم ہو چکا ہے ۔۔۔ جاوید ہاشمی بھی اب تو ساتھ ہے ۔۔۔ ویسے غلط ٹکٹوں کی تقسیم پر بھی مختلف مقامات پر ’’محلہ لیول‘‘ کے دھرنے بھی شدید گرمی میں دےئے گئے ۔۔۔
سترہ سال کی عمر میں شادی ہوئی اور چاہتے ہوئے نہ چاہتے ہوئے گیارہ بچے دنیا میں آ گئے ۔۔۔ بیوی نے کسی زمانے میں میٹرک پاس کیا تھا ۔۔۔ اس نے ملازمت کرنا چاہی ۔۔۔ وہ جہاں جاتی انٹرویو مکمل ہونے سے پہلے ہی جواب مل جاتا ۔۔۔ اس اعلان کے ساتھ کہ ’’بی بی جاؤ جا کے پہلے اپنے گیارہ بچے سنبھالو‘‘ ۔۔۔؟!!!؟ ۔۔۔ ’’اپنے میاں کو دلدل سے نکالو‘‘ ۔۔۔؟ بھلا دلدل میں پھنس جانے والا کبھی اکیلا اس سے نکل پایا ہے؟۔۔۔ جو دلدل میں پھنس گیا ۔۔۔ وہ گیا ۔۔۔؟ جو مسائل میں دھنس گیا ۔۔۔ وہ گیا ۔۔۔ جس کو کوئی اپنا ڈس گیا ۔۔۔ وہ گیا ۔۔۔ جس کے دل میں کوئی بس گیا ۔۔۔ وہ بھی گیا ۔۔۔! (بیچاری اس مہنگائی کے دور میں گیارہ بچے کیسے سنبھالے؟) ۔۔۔
قوم کو پانامہ سے فرصت نہیں ملی ۔۔۔ ادھر الیکشن کی آمد آمد ہے ۔۔۔ عوام پر سنجیدگی طاری ہے ۔۔۔ کچھ مقامات پر امیدوار پچھلے پانچ سال اقتدار میں رہنے کے بعد پھر سے ووٹ مانگنے گئے تو لوگوں نے اُن کی شدید گرمی میں ’’خاطر تواضح‘‘ کر ڈالی، ہلکی پھلکی چھترول بھی ہوئی ۔۔۔ شدید گرمی میں الیکشن ۔۔۔ توبہ توبہ ۔۔۔ لیڈر بھی گرم، عوام بھی گرم اللہ خیر کرئے ۔۔۔؟!
بہرحال فیس بک کے دانشور پوری طرح مطمئن ہیں اور سمجھ رہے ہیں کہ اُن کی ’’پالیسیاں‘‘ بھی کس قابل سمجھی جائیں گی لیکن میاں نواز شریف بہرحال مطمئن نہیں ۔۔۔ حالانکہ چوہدری نثار کے چلے جانے کے بعد میاں نواز شریف کو بہرحال مطمئن ہو جانا چاہئے ۔۔۔؟؟!!؟؟


ای پیپر