گھر بنانے کیلئے اب آسان شرائط پر قرضے ملیں گے :وزیر اعظم
کیپشن:   Image Source : IK Facebook
15 جولائی 2019 (19:58) 2019-07-15

اسلام آباد:وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ گھر بنانے کے لیے آسان شرائط پر قرضوں کے لیے آرڈیننس منگل کو جاری کیا جائےگا،تنخواہ دار طبقہ اور گریڈ 19 سے نیچے کے سرکاری ملازمین کے گھر بنانے کے وسائل نہیں،اسکیم کامقصد لوگ رجسٹر کریں، بتا سکیں ہر مہینے کہ گھر کی کتنی قسط دے سکیں گے، اس سے پتا چل سکے گا شہریوں کے پاس گھر بنانے کے اپنے کیا وسائل ہیں۔

نیا پاکستان ہاو¿سنگ اسکیم شروع ہونے پر 40 صنعتوں کا پہیہ چلنا شروع ہوجائےگا، 10 ہزار گھروں کے لیے قرعہ اندازی کریں گے، انگوری کے پاس شہریوں کو ڈیڑھ سال میں گھر مل سکے گا۔ پیر کو نیا پاکستان ہاو¿سنگ پراجیکٹ اسکیم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ صفر اعشاریہ دو فیصد گھروں کے لیے فنانس ملتا ہے، صرف وہ لوگ گھرلے سکتے ہیں جن کے پاس پیسا ہو، پاکستان میں ایک کروڑ سے زیادہ گھروں کی طلب ہے، تنخواہ دار طبقہ اور گریڈ 19 سے نیچے کے سرکاری ملازمین کے گھر بنانے کے وسائل نہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ آرڈیننس لا رہے ہیں جس سے گھر بنانے کے لیے مالی وسائل کی فراہمی ہوسکے گی، اسکیم کامقصد ہے لوگ رجسٹر کریں، بتا سکیں ہر مہینے کہ گھر کی کتنی قسط دے سکیں گے، اس سے پتا چل سکے گا شہریوں کے پاس گھر بنانے کے اپنے کیا وسائل ہیں۔عمران خان نے کہا کہ ہاو¿سنگ سیکٹر میں بہت سے لوگ آنا چاہتے ہیں، یہ پہلی بار ہے کہ نچلے طبقے کو گھروں کی فراہمی میں ہاو¿سنگ سیکٹر آرہا ہے، کوشش ہے گھر بنانے کے لیے چھوٹی چھوٹی کمپنیاں وجود میں آسکیں۔

نیا پاکستان ہاو¿سنگ اسکیم شروع ہونے پر 40 صنعتوں کا پہیہ چلنا شروع ہوجائےگا۔وزیراعظم نے کہا کہ 10 ہزار گھروں کے لیے قرعہ اندازی کریں گے، انگوری کے پاس شہریوں کو ڈیڑھ سال میں گھر مل سکے گا، کوئٹہ،گوادر، لاہور اور اسلام آباد میں بھی ہاو¿ سنگ اسکیمیں شروع ہوجائیں گی، ڈیٹا اکٹھا کریں گے کہ لوگوں کو کتنے گھروں کی ضرورت ہے، گھر بنانے کے لیے آسان شرائط پر قرضوں کے لیے آرڈیننس منگل کو جاری کیا جائے گا۔


ای پیپر