WhatsApp New App
15 جنوری 2021 (20:08) 2021-01-15

اسلام آباد :واٹس ایپ کی نئی پرائیویسی پالیسی نے جہاں عام شہری کو پریشانی میں مبتلا کر دیا ہے وہیں حکومت پاکستان کو بھی دفتری معاملات میں رکاوٹیں پیش آ رہی ہیں ،جس کی وجہ سے حکومت نے دو بڑے اعلانات کر دئیے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق وزارت آئی ٹی نے پاکستانی صارفین کیلئے دو اپلیکشنز بنانے کا اعلان کردیا، ڈیٹا پروٹیکشن بل کو بھی حتمی شکل دے کر جلد کابینہ ڈویژن کو بھجوائی جائے گی۔

واٹس کی نئی پرائیوسی پالیسی پر ذاتی ڈیٹا شیئر کرنے کی شرط پر پاکستانی صارفین میں شدید تشویش ہے، وفاقی وزیر آئی ٹی کا کہنا ہے صارفین کے ڈیٹا کے تحفظ کا بل جلد پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا۔

وزیر آئی ٹی سید امین الحق  کا کہنا تھاڈیٹا پروٹیکشن بل پر کام کی رفتار تیز کردی ہے، چند روز میں کابینہ ڈویژن کو بھیجا جائے گا۔امین الحق کا مزید کہنا تھا وزارت آئی ٹی نے سرکاری ملازمین کیلئے دو اپلیکشنز بنانے کا اعلان کردیا، ایک اپلیکشن سرکاری ملازمین دوسری عام صارفین کے استعمال کیلئے ہوگی۔

 وزیر آئی ٹی سید امین الحق کا کہنا ہے کہ جون تک سرکاری ملازمین کیلئے اسمارٹ آفس اپلیکشن لانچ کردی جائے گی، جس پر صارفین کا ڈیٹا مکمل طور پر محفوظ ہوگاوزارت آئی ٹی نے کہا کہ نئی پالیسی سے صارفین کے حقوق بری طرح متاثر ہوسکتے ہیں، 2014 میں فیس بک نے واٹس ایپ کو خریدا تھا تو ان کی جانب سے یہی کہا گیا تھا کہ وہ رازداری سے متعلق اپنی پالیسیوں کو تبدیل نہیں کریں گے۔


ای پیپر