وزیراعظم نے آگے بڑھنے کے لئے زرعی شعبے کی ترقی ناگزیر قرار دی 'ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان
15 جنوری 2021 (22:55) 2021-01-15

لاہور: معاون خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے ایوان وزیراعلیٰ میں وزیراعظم عمران خان کے دورہ لاہور کے حوالے سے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ صوبائی وزراء نے زراعت اور زراعت سے جڑے دیگر شعبوں کے بارے میں وزیراعظم کو گزشتہ ڈھائی سال کی کارکردگی اور اقدامات سے آگاہ کیا۔ 

انہوں نے کہا وزیراعظم نے زرعی پیداوار کو تین گنا بڑھانے کے لئے جنگی بنیادوں پر اقدامات کرنے کی ہدایت کی۔ پنجاب میں محکمہ زراعت کے ایک لاکھ سے زیادہ ملازموں کو تربیت اور کپیسٹی بلڈنگ کے ذریعے پہلے سے زیادہ کارگر اور مفید بنایا جائے گا۔ محکمہ زراعت کی طرف سے کسان، اداروں، حکومت اور عوام پر مشتمل چار سٹیک ہولڈرز کا زرعی ترقی کا فارمولا پیش کیا گیا, جسے وزیراعظم نے سراہا۔

ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعظم نے ذخیرہ اندوزوں، ناجائز منافع خوروں اور ملاوٹ کرنے والوں کے گٹھ جوڑ سے عوام کو بچانے کے لئے وزیراعلیٰ پنجاب کوموثر اقدامات اٹھانے کی تاکید کی۔ وزیراعلیٰ نے بتایا کہ پنجاب میں گندم کے وافر ذخائر موجود ہیں اور چینی کی مصنوعی قلت پیدا کر کے قیمت بڑھانے والے تاجروں کے خلاف کارروائی کی جا رہی ہے۔ 

معاون خصوصی نے کہا کہ موجودہ حکومت کے موثر اقدامات کی وجہ سے صنعت کا پہیہ رواں دواں ہو گیا ہے۔  اب دنیا بھر کی منڈیوں میں پاکستانی مصنوعات کو پذیرائی مل رہی ہے۔ صوبہ پنجاب ان تمام شعبوں میں ہراول دستے کا کردار ادا کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے اجلاس کی بھی صدارت کی اور راوی کے پار آباد ہونے والے مجوزہ نئے شہر کی تیاریوں کے حوالے سے ہدایات جاری کیں۔

 ایک سوال کے جواب میں معاون خصوصی نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پر تنقید کرنے سے پہلے مریم نواز قطر سے آنے والی پٹرولیم مصنوعات اور قومی خزانہ ہڑپ کر جانے کے معاملات کا بھی حساب دیں۔ ظل سبحانی نے قومی خزانہ اس طرح چوس لیا کہ اب وہاں سے عوام کو ریلیف دینے کی گنجائش مشکل ہو گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کا تعلق بین الاقوامی منڈی میں قیمتوں کے اتار چڑھائو سے ہے۔

ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ن لیگ گزشتہ 35سالوں سے ایسے قبضہ گروپوں کی سرپرستی کر رہی ہے جن کی گھٹی میں کرپشن شامل ہے۔ تاہم موجودہ حکومت ایسے تمام قبضہ گروپوں کے نیٹ ورکس کو توڑ کر تبدیلی کی راہ ہموار کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کے قائدین کو عوام سے کوئی ہمدردری نہیں۔اقتدار سے محرومی کا مرض جس کا انہیں سامنا ہے کاواحد علاج عدالتیں ہیں۔  


ای پیپر