trump,ivanka,Jared Kushner,corruption,damage,treasury
15 جنوری 2021 (14:59) 2021-01-15

واشنگٹن :امریکی صدر ٹرمپ ان دنوں وائٹ ہائوس کو خالی کر رہے ہیں اور اپنا سامان ذاتی رہائش گاہ پر منتقل کروا رہے ہیں تو اسی اثنا میں ان کی بیٹی ایونکا ٹرمپ اور داماد کیخلاف قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کی خبریں بھی سامنے آگئیں۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ٹرمپ نے اپنی مدت صدارت پوری ہونے سے پانچ روز قبل ہی وائٹ ہائوس سے اپنا سامان منتقل کرنا شروع کر دیا ہے اور اس کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہو چکی ہیں جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ٹرمپ کی تصاویر اور دیگر سامان ان کی ذاتی رہائش گاہ پر منتقل کیا جا رہا ہے جبکہ اس ساری سرگرمی کے دوران امریکی صدر ٹرمپ کی بیٹی ایونکا ٹرمپ اور داماد کشنر پر قومی خزانے کو نقصان پہنچانے اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے کے الزامات بھی لگائے جا رہے ہیں۔

ایونکا اور کشنر پر الزام لگایا گیا ہے کہ وہ سکیورٹی ایجنٹس کو اپنے پرتعیش واش روم کو استعمال کرنے کی اجازت نہیں دیتے تھے۔خفیہ ایجنسی کے اہلکار اس مقصد کیلئے سڑکیں ٗ فٹ پاتھ ٗ پبلک ٹوائلٹس کا استعمال کرتے تھے۔

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے اپنی ایک رپورٹ میں یہ بھی بتایا کہ ٹرمپ کے داماد اور بیٹی نے قومی خزانے کے تقریبا ڈیڑھ لاکھ ڈالر اپنے ٹوائلٹس میں بہا دئیے۔دونوں نے اپنی سکیورٹی پر تعینات خفیہ ایجنٹس کو بنیادی انسانی ضرورت واش روم کے استعمال کی اجازت بھی نہیں دے رکھی تھی۔ایونکا کے گھر میں چھ بڑے اور ایک چھوٹا واش روم ہے لیکن ان سب  واش رومز میں سکیورٹی ایجنٹس کو جانے کی ا جازت نہ تھی اور وہ پبلک ٹوائلٹس ڈھونڈتے رہتے تھے۔

آخر کار اس مقصد کیلئے ایونکا نے اپنے گھر کے سامنے ایک سٹوڈیو اپارٹمنٹ 3 ہزار ڈالر ماہانہ کرایے پر حاصل کیا جس کی ادائیگی بھی امریکی خزانے سے کی گئی۔ یہ رقم پاکستانی روپوں میں تقریبا 23 کروڑ روپے بنتی ہے۔


ای پیپر