وزارتوں سے متعلق عمران خان کے حیران کن فیصلے

15 اگست 2018 (23:28)

اسلام آباد:تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اچھے کی امید ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹاس ہم جیت چکے ہیں توقع کرتے ہیں میچ اچھا ہوگا ۔میچ اچھا کھیلنے کیلئے ضروری ہے کہ ٹیم کے کھلاڑی بھی اچھے ہوں ایسے میں کپتان نے اپنی ٹیم میں مختلف پوزیشنوں پر بہترین فیلڈر تعینات کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ۔

عمران خان نے پارلیمنٹ ہاوس آمد کے موقع پر صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو میں کہا کہ ٹاس تو تحریک انصاف کی ٹیم پہلے ہی جیت چکی ہے اور پیچ بھی اچھی نظر آرہی ہے اب اچھے کی امید کررہے ہیں کہ میچ اچھا اور دلچسپ ہوگا۔وزارت عظمیٰ کے مضبوط امیدوار اور پاکستان تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان نے آئندہ حکومت میں وزارتوں سے متعلق اہم فیصلے کر لیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی کابینہ 20 اگست کو حلف اٹھائے گی۔ اس حوالے سے چیئر مین پی ٹی آئی عمران خان کی مشاورت حتمی مراحل میں داخل ہوگئی ہے اور وزارتوں سے متعلق اہم فیصلے کر لیے گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق عبدالرزاق داﺅد کو وزیراعظم کا مشیر برائے تجارت اور بابر اعوان کو مشیرِ قانون بنایا جاسکتا ہے۔ عمران خان نے وزارت داخلہ کا قلمدان فی الحال اپنے پاس رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔


شاہ محمود قریشی کو وزارت خارجہ کا قلمدان دیا جائے گا۔ وزارت دفاع کے لیے پرویز خٹک اور وزارت خزانہ کے لیے اسد عمر کا نام زیر غور ہے۔ وزارت اطلاعات و نشریات کے لیے فواد چوہدری مضبوط امیدوار سمجھے جا رہے ہیں۔ وزارت پانی و بجلی اور وزارت توانائی کا تاحال کوئی فیصلہ نہیں ہوا۔

دوسری طرف نو منتخب سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے وزیر اعظم کے انتخابی عمل کا اعلان کردیا۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم کا انتخاب جمعہ کے دن ساڑھے 3بجے قومی اسمبلی کے اجلاس میں ہو گا۔اس حوالے سے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ کل دن 2بجے تک کاغذات نامزدگی جمع کرائے جا سکتے ہیں اور کل ہی 3بجے تک جانچ پڑتال کا عمل مکمل کیا جائے گا۔


واضح رہے کہ پاکستان کے انیسویں وزیراعظم کا انتخاب 17 اگست کو ہوگا اور وزارت عظمیٰ کے لیے پاکستان تحریک انصاف کی طرف سے عمران خان اور مسلم لیگ (ن) کی جانب سے شہباز شریف میدان میں ہیں۔

مزیدخبریں