سابق مس سری لنکا کو پولیس نے گرفتار کر لیا
15 اپریل 2021 (15:25) 2021-04-15

کولمبو: سری لنکن پولیس نے سابق مس سری لنکا کو گرفتار کر لیا۔

تفصیلا ت کے مطابق مقامی پولیس نے ’مسز سری لنکا‘ کا اعزاز حاصل کرنے والی پشپیکا ڈی سلوا کا تاج چھیننے اور اسٹیج پر ہنگامہ آرائی کے جرم میں سابق مسز سری لنکا کو گرفتار کرلیا ہے۔ پولیس کے مطابق سابق مسز سری لنکا اور موجودہ مسز ورلڈ کیرولین جوری اور ان کے ساتھی کو  حملہ  کرنے اور  نقصان پہنچانے کے جرم میں گرفتار کیا گیا۔

واضح رہے کہ سری لنکا کی سال 2021 کی فاتح قرار پانے والی ملکہ حسن سے سٹیج پر تاج چھین لیا گیا تھا اور ہاتھ پائی کے دسوران کے سرپر چوٹ آئی تھی۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق اتوار کے روز معنقدہ ایک تقریب میں سری لنکن بیوٹی کوئن پشپیکا ڈی سلو کو مسز سری لنکا کا خطاب دیا گیا ، تاہم کچھ ہی لمحوں بعد 2019 کی فاتح کیرولن جوری نے مسز ڈی سلو کے سرپر سجایا گیا تاج اتار کر رنر اپ کو پہنا دیا  تھا۔ 

کیرولن جوری نے دعویٰ کہا ڈی سلو اس لقب سے نوازا جاسکتا کیونکہ انہیں طلاق دے دی گئی ہے ۔ ڈی سلوا اور کیرولن جوری کے درمیان سٹیج پر ہاتھا پائی کے دواران سری لنکا کا سب سے بڑا بیوٹی ایوارڈ جیتنے والی ملکہ حسن کے سر میں چوٹ آئی ۔ 

جوری نے اس کے سر سے تاج اتارا  اور زور زور سے کہنے لگی کہ یہ طلاق یافتہ ہے اس کا حق نہیں بنتا ۔ رنر اپ اصل فاتح ہے ۔ 

اس واقعہ کے بعد مسز ڈی سلوا روتے ہوئے سٹیج سے باہر چلی گئی ۔ بعد میں منتظمین نے مسز ڈی سلوا سے معافی مانگتے ہوئے اعلان کیا کہ انہوں نے شوہر سے علحیدگی اختیار کی ہے اور ان کو طلاق نہیں دی گئی ہے ۔


ای پیپر