فوٹوبشکریہ فیس بک

بیوروکریٹ جب تک کام نہیں کریں گے، ہمارا ریفارم پروگرام رہ جائے گا: عمران خان
14 ستمبر 2018 (13:13) 2018-09-14

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ بیوروکریٹ جب تک کام نہیں کریں گے، ہمارا ریفارم پروگرام رہ جائے گا۔

سرکاری ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ کبھی پاکستان کو اتنے چیلنجز نہیں تھے جتنے آج ہیں پاکستان پر تیس ہزار ارب کا قرضہ ہے۔ قرضوں پر ہر روز 6 ارب روپے سود ادا کر رہے ہیں۔

عمران خان نے مزید کہا کہ سیاستدانوں، عوام اور بیوروکریسی نے خود کو بدلنا ہے۔ کوئی چیز دنیا میں نا ممکن نہیں ہے، ناممکن کو ممکن بنانے کیلئے انسان کو خود کو بدلنا پڑتا ہے۔ ہمارے حکمران طبقے نے غریب کے پیسے پر عیاشی کی روایت کو اپنایا۔

انہوں نے کہا کہ بیوروکریسی کی شکایات آئیں، اس پر چیئرمین نیب سے بات کی، آپ ایک موقع لیں، غلطیاں ہوتی ہیں، مجھ سے بھی ہوئیں۔ احتساب کے عمل میں آپ کو ذلت کا سامنا نہیں ہوگا۔ ہم آپ کی پوری مدد کریں گے، آپ کو یقین دلاتا ہوں کسی قسم کی سیاسی مداخلت نہیں ہوگی۔ بیوروکریسی کو سیاسی مداخلت سے پاک کریں گے۔ ہم بیوروکریسی کو تحفظ فراہم کریں گے اور سیاسی مداخلت سے بچائیں گے، کچھ لوگ گھبرائے ہوئے ہیں، لیکن گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں۔ تھوڑا سا مشکل وقت برداشت کریں، مشکل وقت زیادہ دیر تک نہیں ہوتا۔ آپ کی کسی بھی سیاست جماعت سے وابستگی ہو، مجھے کوئی لینا دینا نہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ اگر ہم نے گورننس اسٹرکچر ٹھیک کر لیا تو قوم بہت اوپر جائے گی، گورننس کی وجہ سے یہاں سرمایہ کاری نہیں آتی،2 سال بعد تنخواہ دار طبقے کو بڑی بڑی تنخواہیں دیں گے۔ 2 سال میں گورننس ٹھیک ہو گئی تو ملک میں بہت سرمایہ کاری ہوگی۔ اگر خود کو تبدیل نہیں کریں گے تو ترقی نہیں کریں گے۔

 

 


ای پیپر