file photo

چیف سلیکٹر کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ میرا اپنا تھا،مصباح الحق نے استعفیٰ کی تصدیق کردی
14 اکتوبر 2020 (13:48) 2020-10-14

لاہور:پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق نے پریس کانفرنس میں چیف سلیکٹر کے عہدے سے استعفیٰ دینے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ذرائع کے جانب سے جاری کی گئی استعفیٰ کی خبر کی مصباح الحق نے تصدیق کردی ہے اور انہوں نے کہا کہ انٹرنیشنل کرکٹ کے حوالے سے فوکس کرنا ہوگا،اب میں کوچنگ کو وقت دوں گا،بورڈ نے مجھے آپشن دیا کہ چیف سلیکٹر کا عہدہ چھوڑ نا چاہیں تو چھوڑ سکتے ہیں،مجھے یہ وقت مناسب لگا تو میں نے یہ فیصلہ کیا،اب تمام تر توجہ کوچنگ پر ہوگی۔

ہیڈ کوچ پاکستان کرکٹ ٹیم نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ چیف سلیکٹر کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہےجبکہ چیف سلیکٹر کا عہدہ چھوڑنے کا یہ وقت درست ہے،پی سی بی کو اپنے فیصلے سے آگاہ کردیا ہے،کوئی دبائو نہیں تھا بلکہ چیف سلیکٹر کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ میرا اپنا تھا،کوشش کی ہے جو پاکستان کے لئے اچھا ہوگا وہی کروں،زمبابوے کیخلاف سیریز کیلئے ٹیمیں منتخب کروں گا،چیئرمین پی سی بی سے نوک جھونک کی باتیں غلط ہیں۔

ذرائع کے مطابق  پاکستان کرکٹ بورڈ کی کرکٹ کمیٹی کو 30ستمبر سے قبل پاکستانی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق کوطلب کرکے ٹیم کی مسلسل خراب کارکردگی اور انگلینڈ کے دورے پر باز پرس کی تھی ۔

 حیران کن طور پر اقبال قاسم کے استعفیٰ کے بعد کرکٹ کمیٹی غیر فعال ہے۔ پی سی بی کو ایسے چیئرمین کرکٹ کمیٹی کی تلاش ہے جو مصباح الحق کی طرح نرم مزاج اور دفاعی انداز رکھتا ہو۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ کرکٹ کمیٹی کا کردار سفارش کی حد تک ہے ، کوچ یا کپتان کو تبدیل کرنا چیئرمین کا صوابدیدی اختیار ہے۔ پی سی بی چیئرمین احسان مانی آئے دن غیر ملکی میڈیا میں جارحانہ بیانات دینے میں شہرت رکھتے ہیں۔

  پی سی بی ترجمان کے مطابق مصباح الحق کی سالانہ کارکردگی کا تجزیہ کرکٹ کمیٹی ملتان میں قومی ٹی ٹوئنٹی سے قبل کرےگا۔


ای پیپر