کورونا سے پاکستان میں مزید 48افراد انتقال کر گئے،این سی او سی
14 May 2021 (08:47) 2021-05-14

اسلام آباد: پاکستان میں کورونا  سے ایک روز میں مزید 48 افراد انتقال کر گئے۔

 این سی او سی کی جانب سے جاری کیے جانے والے اعدادو شمار کے مطابق اموات کی تعداد 19   ہزار384  ہو گئی ہیں ۔24 گھنٹے  میں 2 ہزار517 افراد میں وائرس کی تصدیق 30 ہزار700       افراد کے کورونا ٹیسٹ کئے گئے ہیں ۔

این سی او سی کی جانب سے جاری اعداد وشمار کے مطابق کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کی شرح8.19    فیصد رہی جبکہ ملک بھر میں کورونا کیسز کی مجموعی تعداد 8 لاکھ73ہزار220    ہوگئی۔

واضح رہے کہ گزشترہ روز   پاکستان میں کورونا وائرس قہر ڈھانے لگا ہے، صرف ایک روز میں مزید 126 شہری موت کے منہ میں چلے گئے تھے ۔ اموات میں حالیہ اضافے سے کورونا سے جاں بحق افراد کی تعداد 19 ہزار 336 ہو گئی ۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹے میں 3 ہزار 265 نئے کیس رپورٹ ہوئے جبکہ 39 ہزار 101 کورونا ٹیسٹ کیے گئے تھے۔ ملک میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 8.35 فیصد رہی۔

محکمہ صحت خیبر پختونخوا کے مطابق 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس سے 522 افراد متاثر اور 29 ہلاک ہوئے۔

صوبے میں کورونا متاثرین کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 25 ہزار 914 جبکہ مجموعی ہلاک شدگان کی تعداد 3697 ہوگئی ۔

خیبر پختونخوا میں 24 گھنٹوں کے دوران مزید 814 افراد کورونا سے صحت یاب ہونے کے بعد مجموعی صحت یاب مریضوں کی تعداد ایک لاکھ 13 ہزار 502 ہوگئی ۔

اس وقت کورونا کے فعال کیسز کی تعداد آٹھ ہزار 697 ۔ گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران پشاور میں 123، مردان میں 52، سوات میں 38، چارسدہ میں 37 اور دیر اپر میں 32 نئے مریض سامنے آئے۔

دوسی جانب ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہندوستان میں کورونا وائرس کی وبا میں تیزی لانے والی قسم دنیا میں درجنوں ممالک میں پائی گئی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ کووڈ 19 کی قسم بی.1.617 قسم جو اکتوبر میں پہلی مرتبہ ہندوستان میں دریافت ہوئی تھی، جمع کردہ 4500 نمونوں میں پایا گیا ہے جو کہ 44 ممالک میں جمع کیے گئے ہیں۔

بیان میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ہندوستان سے باہر اس وائرس قسم سب سے زیادہ انگلینڈ میں پائی گئی ہے جسے پہلے ہی انتہائی خطرناک قرار دیا جا چکا ہے۔

اسی لئے ہندوستان پایا جانے والے اس کورونا وائرس کو جنوبی افریقا، برازیل اور برطانیہ میں ملنے والی اقسام کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔ اس وائرس کی اقسام زیادہ تیزی سے پھیلتی ہیں۔


ای پیپر