UK Parliament Big Announcement about Kashmir
14 جنوری 2021 (20:24) 2021-01-14

لندن :مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کیخلاف برطانوی ارکین پارلیمنٹ نے مودی کا کچا چھٹا کھول دیا ،برطانوی پارلیمنٹ میں مطالبہ کیا گیا کہ مقبوضہ کشمیر کی زمینی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے دہلی میں برطانوی ہائی کمیشن کی ٹیم کو دورہ کرنے کی اجازت دی جائے ۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی اراکین پارلیمنٹ نے بھارت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ مودی  مقبوضہ کشمیر سے فوری طور پر پابندیاں اٹھائے، زمینی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے دہلی میں برطانوی ہائی کمیشن کی ٹیم کو مقبوضہ وادی کا دورہ کرنے کی اجازت دی جائے ،لیبر پارٹی کی رکن  'سارااوون کا کہنا تھامقبوضہ کشمیر میں شہادتوں کی شفاف تحقیقات کی جائیں۔

کنزرویٹو پارٹی کے جیمز ڈیلی  نے  جبری گمشدگیوں،زیادتی اور جنسی تشدد کے  بڑھتے ہوئے واقعات کی نشاندہی کی،لیبر پارٹی کے جان سپیلر نے بھارتی موقف مسترد کرتے ہوئے کہامقبوضہ کشمیر ہرگز بھارت کا اندرونی معاملہ نہیں ہے،کنزرویٹو پارٹی کی سارا برِٹ کلِف  کا کہناتھاہزاروں کشمیریوں کو جیلوں میں ڈالا گیا،شفاف ٹرائل کا حق بھی نہیں دیا گیا.

لیبر پارٹی کی رکن ناز شاہ  نے نقطہ اٹھایاکہ 2015 سے 2020  کے دوران برطانیہ نے 50 ارب پاؤنڈ مالیت کا اسلحہ بھارت کو بیچا،یہی اسلحہ کشمیریوں کا خون بہانے میں استعمال ہو گا،بورس جونسن نے بھارت کا دورہ تو ملتوی کیا ہے، کیا وہ اسلحہ بیچنا بھی بند کریں گے؟کنزرویٹو پارٹی کے روبی مور  نے مطالبہ کیا کہاقوام متحدہ کو مقبوضہ کشمیر تک رسائی حاصل کر کے حقائق کا پتہ لگانا چاہیے۔


ای پیپر