Saudi Prince Big Announcement about Saudi Arab
14 جنوری 2021 (22:53) 2021-01-14

    ریاض:سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے سعودی عرب میں سرمایہ کاری کے بڑے امکانات  کے حوالے سے  کہا  ہے کہ سعودی عرب میں آئندہ دس برس کے دوران 6 ٹریلین ڈالر کی سرمایہ کاری کے مواقع ہیں۔ جس میں سے تین ٹریلین ڈالر وژن 2030 کے اصلاحاتی پروگرام کے تحت نئے منصوبوں میں لگائے جائیں گے۔

  شہزادہ محمد بن سلمان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب وژن 2030 کے تحت مملکت کی ایسی توانائیوں سے استفادہ کرے گا، جس سے اب تک فائدہ نہیں اٹھایا گیا ہے، نئے شعبے قائم ہوں گے۔ولی عہد کے اس اعلان کے بعد عرب ممالک کے دشمنوں میں ہلچل مچ گئی ہے ،جو عرب ممالک کو اپنا غلام بنانے کی تیاریاں کر رہے تھے ،سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے شاہکار منصوبوں کا اعلان کر کے عالمی طاقتوں کے خواب چکنا چور کر دئیے ہیں ۔

 ولی عہد نے کہا کہ اس بڑے اقتصادی پرگرام کی 85 فیصد فنڈنگ پبلک انویسٹنڈ فنڈ اور مملکت کا پرائیوٹ سیکڑ کرے گا جبکہ باقی پندرہ فیصد فنڈنگ کے لیے خلیج اور دنیا دیگر ممالک میں غیر ملکی سرمائے کو متحرک کیا جائے گا۔ولی عہد نے کہا کہ سعودی عرب تجدد پذیر توانائی، چوتھے صنعتی انقلاب، سیاحت، ٹرانسپورٹ، تفریحات اور کھیلوں کے شعبے میں قائدانہ پوزیشن حاصل کرنے کے لیے پرعزم ہے۔ اسی تناظر میں ان شعبو ں میں سرمایہ لگایا جائے گا۔

انہوں نے مزید نے کہا کہ مملکت میں خدا داد صلاحیت کے مالک شہریوں کی استعداد کو نکھارنے، ٹیکنالوجی، نالج کی منتقلی اور سعودائزیشن میں اضافہ کرنے والے موثر اور سنجیدہ شرکا کے کردار کو قدر ومنزلت سے دیکھیں گے۔

محمد بن سلمان نے کہا کہ سعودی عرب نے یہ کامیابیاں وژن 2030  کے تحت چار برسوں کے دوران تیز رفتاراصلاحات اور تبدیلی پروگرام کے ضمن حاصل کی ہیں۔ آئندد دس بر س کے دروان ان اصلاحات میں مزید اضافہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ 2020 چیلنجوں سے بھرا سال تھا اور سعودی عرب اس کے لیے تیار تھا۔ولی عہد کا کہنا تھا سعودی عرب خطے کے استحکام اور ترقی  کے لیے اپنا کردار کرتا رہا ہے اور آئندہ بھی کرتا رہے گا۔ 

تیل منڈی کے تحفظ کے لیے کام کرتا رہا ہے اور آئندہ بھی کرے گا۔سعودی عرب کو یقین ہے کہ اس کا یہ کردار اقتصادی تعاون کے فروغ ، امن وسلامتی کے قیام اور خطے کے مفاد میں ہے۔


ای پیپر