Facebook, Twitter, 51 billion, dollars, Trump's accounts, Joe Biden
14 جنوری 2021 (09:58) 2021-01-14

نیو یارک: کیپٹل ہل کے پُرتشدد واقع کے بعد فیس بک اور ٹویٹر نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند کیے تھے جس کے نتیجے میں دونوں کمپنیوں کو 51 بلین امریکی ڈالر کا نقصان ہو چکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فیس بک کو مجموعی طور پر 47 بلین سے زائد جبکہ ٹویٹر کو 3 بلین ڈالر سے زائد کا نقصان ہوا ہے۔

یاد رہے کہ سوشل میڈیا کمپنیوں نے اکاؤنٹس بلاک کرنے پر مؤقف اپنایا کہ ٹرمپ اپنے حامیوں کو نومنتخب صدر جوبائیڈن کی تقریب حلف برداری پر ہنگامہ آرائی کیلئے اکسا سکتے تھے۔

ادھر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ویڈیو پیغام میں عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ تناؤ کم کریں ، انہوں نے اپنے حامیوں کو پرُامن رہنے اور تشدد سے گریز کرنے کی ہدایت کی ہے۔

ٹرمپ نے کہا کہ مزید مظاہروں کی رپورٹس پر یہی کہنا چاہتا ہوں کہ کسی قسم کی قانون شکنی نہ کریں اور جذبات پر قابو رکھیں۔

یاد رہے کہ کیپٹل ہل ہنگامہ آرائی کے فورا بعد فیس بک اور ٹویٹر نے ٹرمپ کے اکاؤنٹس بند کر دیئے تھے۔ جبکہ ٹویٹر نے تو ان کے 70 ہزار حامیوں کے اکاؤنٹس بھی بلاک کرنے کے ساتھ ساتھ امریکی صدر کا اکاؤنٹ ہمیشہ کیلئے معطل کر دیا تھا۔

خیال رہے کہ فیس بک اور ٹویٹر کے بعد یو ٹیوب نے بھی ٹرمپ کا اکاؤنٹ معطل کر دیا ہے اور یہ الزام لگایا گیا ہے کہ ٹرمپ نے جو ویڈیوز اپ لوڈ کیں ہیں وہ یو ٹیوب کی پالیسی گائیڈ لائنز کے خلاف تھیں۔ یوٹیوب انتظامیہ کا مزید کہنا تھا کہ ٹرمپ کی ویڈیوز سے عوام میں اشتعال پھیلنے کا خطرہ تھا اس لیے یہ ویڈیوز ڈیلیٹ کی گئیں ہیں۔


ای پیپر