Indian Army, unprovoked firing, Chirikot sector, LoC
14 دسمبر 2020 (11:03) 2020-12-14

لاہور: امن کا دشمن بھارت لائن آف کنٹرول پر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیوں سے باز نہ آیا، ایک بار پھر بھارتی فوج چری کوٹ سیکٹر میں ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ کر دی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج نے جان بوجھ کر شہری آبادی کو نشانہ بنایا جس کی وجہ سے 45 سالہ خاتون زخمی ہوگئی۔

جنگی جنون میں مبتلا مودی سرکار خطے کا امن برباد کرنے کے درپے ہے۔ بھارتی فوج کی جانب سے ایسا پہلی بار نہیں ہوا بلکہ آئی دن بھارت کی جانب سے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیاں ہوتی رہتی ہیں۔

اس حوالے سے پاکستان کے دفتر خارجہ کی جانب سے بھارتی سفارتکاروں کو بلا کر احتجاج بھی ریکارڈ کروایا گیا ہے لیکن مودی سرکار پر کوئی اثر نہیں ہوتا۔

اس کے علاوہ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے یہ ثابت کیا ہے کہ بھارت پاکستان میں دہشتگردی کروا رہا ہے۔ پاکستان نے اس کے ثبوت اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کو بھی فراہم کر دیئے ہیں لیکن دنیا میں بھارت کی مضبوط لوبی کی وجہ سے اُس کے خلاف فیصلہ کن کارروائی نہیں ہو پاتی۔

گزشتہ روز آئی ایس پی آر کی جانب سے یہ انکشاف بھی کیا گیا تھا کہ مودی سرکار پاکستان کے خلاف خفیہ سازشیں کر رہی ہے۔ جس کے بعد پاکستان میں مسلح افواج کو ہائی الرٹ کر دیا گیا تھا تاکہ دشمن اپنی سازش میں کامیاب نہ ہو سکے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ بھارت کسی بھی وقت اپنے اندرونی مسائل سے توجہ ہٹانے کے لیے پلوامہ ڈرامہ کی طرز پر ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈری پر کارروائی کر سکتا ہے۔

واضح رہے کہ آجکل بھارت میں کسانوں کا احتجاج جاری ہے جس میں سکھوں کے علاوہ باقی اقلیتیں بھی شامل ہیں۔ اس احتجاج کا مقصد مودی کو ایسے قانون بنانے سے روکنا ہے جو غریبوں اور اقلیتوں کے خلاف ہوں۔


ای پیپر