حافظ سعید کیخلاف تیزی سے مقدمہ چلایا جائے : امریکہ
14 دسمبر 2019 (19:25) 2019-12-14

واشنگٹن: امریکا نے پاکستانی عدالت کی جانب سے حافظ سعید پر فرد جرم عائد کرنے کے اقدام کا خیر مقدم کیا اور اسلام آباد پر زور دیا ہے کہ ان کے خلاف مکمل قانونی چارہ جوئی اور الزامات پر تیزی سے مقدمہ چلایا جائے۔

تفصیلات کی رپورٹ کے مطابق حافظ سعید کالعدم جماعت الدعوۃکے سربراہ اور بھارتی شہر ممبئی میں 26 نومبر 2008 کو ہونے والے حملوں کے مرکزی ملزم ہیں۔قبل ازیں 11 دسمبر کو انسداد دہشت گردی کی عدالت نے حافظ سعید اور ان کے 3 ساتھیوں حافط عبدالسلام بن محمد، محمد اشرف اور ظفر اقبال پر دہشت گردی کے لیے مالی معاونت پر فرد جرم عائد کی گئی تھی۔

 ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے امریکی سیکریٹری آف اسٹیٹ برائے جنوبی اور وسطی ایشیا ایلس جی ویلز نے کہا کہ ہم حافظ سعید اور ان کے ساتھیوں پر فرد جرم عائد کرنے کا خیر مقدم کرتے ہیں '۔ہم پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ دہشت گردی کے لیے مالی معاونت کے تدارک کے لیے بین الاقوامی ذمہ داریوں کے مطابق مکمل قانونی چارہ جوئی اور مقدمے کی فوری سماعت کو یقینی بنائے اور 26/11 جیسے دہشت گرد حملوں کے قصورواروں کو انصاف کے کٹہرے میں لائے۔


ای پیپر