لبنان میں فوج کو وسیع اختیارات دینے کی منظوری
14 اگست 2020 (23:04) 2020-08-14

بیروت: لبنان کی پارلیمنٹ نے ملک میں ہنگامی حالات کے نفاذ اور فوج کے لیے   وسیع اختیارات کی منظوری دیدی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پارلیمنٹ نے بیروت میں ہونے والے قیامت خیز دھماکے کے بعد ملک میں پھوٹنے والے مظاہروں کے بعد پیدا ہونے والے غیر معمولی حالات میں ملک میں ہنگامی حالات کے نفاذ اور فوج کے لیے وسیع انتظامی اختیارات کی منظوری دی۔بیروت دھماکے کے بعد لبنان کی کابینہ نے ملک میں دو ہفتے کے لیے ایمرجینسی نافذ کی تھی جب کہ پارلیمنٹ نے اس میں 8 روز کی توسیع کرکے اس فیصلے کی منظوری دے دی ہے۔

ہنگامی حالات کے نفاذ کے بعد فوج تقریر و تحریر، اجتماع اور سیکیورٹی سے متعلق شبہات کی بنیاد پر کسی کو بھی گرفتار کرنے کی مجاز ہوگی۔ پارلیمنٹ کے نو ارکان کے مستعفی ہونے کے بعد  119 اراکین میں سے صرف ایک نے اس فیصلے کی مخالفت کی ہے۔دوسری جانب مظاہرین اور مقامی فورسز کے مابین تصادم کے واقعات میں 728 افراد زخمی ہوچکے ہیں اور 12 صحافیوں پر حملے ہوچکے ہیں جن میں سے 4 صحافیوں پر فوجی اہل کاروں کی جانب سے نشانہ بنایا گیا۔


ای پیپر