Kidney Hills Reference: Petitions filed by the accused, the accused could not be charged
کیپشن:   فائل فوٹو
14 اپریل 2021 (11:08) 2021-04-14

اسلام آباد: احتساب عدالت میں کڈنی ہلز ریفرنس میں ملزمان کی جانب سے درخواستیں دائر ہونے کے باعث فرد جرم عائد نہیں ہو سکی ہے۔

سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا، سابق ایم ڈی پی آئی اے اعجاز ہارون سمیت دیگر ملزمان پیش ہوئے۔ نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ آئندہ سماعت پر درخواستوں پر جواب دینگے۔ عدالت نے سماعت مزید کارووائی کیلئے 28 اپریل تک ملتوی کر دی۔

تفصیل کے مطابق احتساب عدالت میں سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کیخلاف کڈنی ہلز ریفرنس کی سماعت ہوئی۔ سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا ، سابق ایم ڈی پی آئی اے اعجاز ہارون سمیت دیگر ملزمان پیش ہوئے۔

ملزمان کی جانب سے درخواستیں دائر ہونےکے باعث فرد جرم عائد نہ ہو سکی۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ سلیم مانڈوی والا کیخلاف کیس نہیں بنتا،جے آئی ٹی رپورٹ میں بھی سلیم مانڈوی والا کا بطور ملزم کردار ثابت نہیں ہوتا احتساب عدالت سلیم مانڈؤی والا کی بریت کی درخواست منظور کرے۔

درخواست احتساب عدالت میں فرد جرم عائد ہونے سے قبل دائر کی گئی ،نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ آئندہ سماعت پر درخواستوں پر جواب دینگے، آئندہ سماعت پر بتائینگے کہ منی ٹریل کہاں سے آئی، نیب نے سینیٹر سلیم مانڈوی والا ، اعجاز ہارون سمیت دیگر کو ملزم نامزد کر رکھا ہے۔

ریفرنس پر احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے سماعت کی ،احتساب عدالت نےسلیم مانڈوی والا، اعجاز ہارون سمیت دیگر ملزمان کو فرد جرم عائد کرنے کیلئے طلب کر رکھا ہے ،عدالت نے سماعت مزید کارروائی کیلئے 28 اپریل تک ملتوی کردی۔


ای پیپر