شام نے 50بار کیمیائی ہتھیار استعمال کئے :امریکہ
14 اپریل 2018 (12:23) 2018-04-14


واشنگٹن: امریکا اور اتحادیوں نے کہا ہے کہ بشار الاسد کی فوج نے سات سال کی خانہ جنگی کے دوران 50بار کیمیائی ہتھیار استعمال کیے،شامی صدر کو کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی اجازت ملتی رہی تو یہ تمام اقوام اور عوام کے لیے نقصان دہ ہوگا۔


امریکا اور اس کے اتحادیوں کا موقف ہے کہ بشار الاسد کی فوج نے سات سال کی خانہ جنگی کے دوران 50بار کیمیائی ہتھیار استعمال کیے۔نہتے شہریوں پر تازہ کیمیائی حملہ 7اپریل کو غوطہ کے شہر دوما پر کیا گیاجس میں 70سے زیادہ افراد جاں بحق اور سیکڑوں متاثر ہوئے، ان میں خواتین اور بچوں کی بھی بڑی تعداد شامل ہے۔


اقوام متحدہ میں امریکی سفیر نکی ہیلے کا کہنا ہے کہ شامی صدر کی فوج نے 7 سالہ خانہ جنگی کے دوران 50 مرتبہ کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا۔نکی ہیلے نے یہ بھی کہا کہ اگر شامی صدر کو کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی اجازت ملتی رہی تو یہ تمام اقوام اور عوام کے لیے نقصان دہ ہوگا۔ امریکا کے پاس ثبوت ہیں کہ شام نے دوما میں کیمیائی حملہ کیا تھا۔ شام کی فوج نے کم از کم 50 بار کیمیائی ہتھیار استعمال کئے تھے۔


لبنانی تنظیم حزب اللہ کے سر براہ حسن نصر اللہ کہتے ہیں کہ شام میں اسرائیلی حملہ دراصل ایران کے ساتھ جنگ شروع ہونے کے مترادف ہے۔برطانیہ نے شام میں کیمیائی ہتھیار استعمال کرنے کے روسی دعوے کی تردید کی تھی۔


ای پیپر