خود کو طاقتور ترین لیڈر سمجھنے والے کم جونگ ملٹری پریڈ میں اچانک کیوں رو پڑے ؟
13 اکتوبر 2020 (18:39) 2020-10-13

پیانگیانک:شمالی کوریا کے سپریم لیڈر کم جونگ اون کی آنکھوں میں اس وقت آنسو آگئے جب وہ ملٹری پریڈ کے دوران خطاب کر رہے تھے ، کم جونگ عوام کامعیار زندگی ،قدرتی آفات اور کرونا وائرس کی مناسب روک تھام نہ کرنے پر رو پڑے ۔

بڑے بڑے دھماکے اور دبنگ فیصلے کرنے والے شمالی کوریا کے سپریم لیڈر کم جونگ آن اپنے جذبات پر قابو نہ رکھتے ہوئے ملٹری پریڈ کے دوران رو پڑے ، کم جونگ کا کہنا تھا کہ وہ غلطی کا اعتراف کرتے ہیں کہ انہوں نے اپنی عوام کا معیار زندگی بلند نہیں کیا ،انہوں نے عوام سے معافی مانگتے ہوئے کہا کہ وہ فوج اور عوام کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ انہوں نے معاشی مشکلات میں تمام چیلنجز کا بھرپور مقابلہ کیا ۔

شمالی کوریا کے سرکاری خبر رساں ادارے نے کم جونگ اُن کی ایڈٹ شدہ ویڈیو جاری کی ہے جس میں اُنہیں ملٹری پریڈ سے خطاب کے دوران آنسوؤں سے روتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے،غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق کم جونگ ان  ملک کو درپیش قدرتی آفات اور کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے کوششوں کا ذکر کرتے ہوئے جذباتی ہو گئے۔ انہوں نے فوجی اہلکاروں کو خراجِ تحسین پیش کیا اور شہریوں کا معیارِ زندگی بلند کرنے میں ناکامی پر اُن سے معذرت بھی کی۔

کم جونگ اُن نے اپنے خطاب میں کہا کہ عوام کا مجھ پر اعتماد آسمان جتنا بلند اور سمندر جتنا گہرا ہے لیکن میں اُنہیں اطمینان بخش زندگی گزارنے کی سہولیات فراہم کرنے میں ناکام ہو گیا ہوں، ایک موقع پر کم جونگ اُون نے ہچکچاتے ہوئے کہا کہ اس سب کے لیے وہ معافی کے طلب گار ہیں،اس حوالے سے آزاد محقق اور شمالی کوریا کی تجزیہ کار رچل منیونگ لی نے کہا ہے کہ کم جونگ کی تقریر خاص طور پر مقامی افراد کے لیے تھی جس کا مقصد ممکنہ طور پر کم کو قابل اور کرشماتی رہنما کے طور پر پیش کیا جانا بھی ہو سکتا ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ عالمی پابندیوں، قدرتی آفات، سیلاب اور کرونا وائرس کی وجہ سے شمالی کوریا کو معاشی مشکلات کا سامنا ہے۔


ای پیپر