file photo

بلوچستان میں بچے سے جنسی زیادتی کا کیس، چیف جسٹس نے اہم ہدایات جاری کر دیں
13 اکتوبر 2020 (14:37) 2020-10-13

کوئٹہ: بلوچستان ہائیکورٹ کے چیف جسٹس جمال خان مندوخیل نے کہا ہے کہ صوبہ بھر میں بچوں سے جنسی زیادتی کے واقعات میں اضافہ کا رجحان دیکھا جارہا ہے۔ تمام کمشنرز اور ڈی آئی جیز اپنے متعلقہ علاقوں میں ایسے واقعات کے خاتمے کے لئے تمام تر ممکنہ اقدامات کریں۔

یہ ہدایات چیف جسٹس نے قلعہ عبد اللہ میں 9 سالہ بچے سے جنسی زیادتی و بعد ازاں قتل کے مقدمے کی سماعت کے دوران دیئے ۔ یہ مقدمہ مقتول بچے کے والد کے جانب سے درج کرایا گیا تھا۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں ایک ڈویژن بینچ نے مقدمے کی سماعت کی ۔ سماعت کے دوران بینچ نے ہدایت کی کہ اس واقعہ میں ملوث عناصر کو کیفرکردار تک پہنچائیں۔

ادھر گجر پورہ زیادتی کیس کے مرکزی ملزم کو دن رات چھاپوں کے بعد بالآخر پولیس نے قابو کر لیا ہے، ملزم عابد ملہی کو پکڑاونے میں اس کی بیوی نے مرکزی کردار ادا کیا ۔

تفصیلات کے مطابق گجر پورہ زیادتی کیس میں ملزم عابد ملہی کی بیوی نے پولیس کی مدد کر کے گرفتار کروایا ، ذرائع کے مطابق لاہور پولیس نے عابد ملہی کی بیوی جدید ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے ایسا موبائل فون فراہم کیا تھا جس پر اس کی مانیٹرنگ کی جا رہی تھی، ملزم عابد ملہی مختلف نمبروں سے بیوی کو کال کرتا تھا، اور اس سے رابطے میں تھا۔

لاہور پولیس اور حساس ادارے کی مانیٹرنگ ٹیم کو اطلاع ملی تھی کہ ملزم عابد ملہی نے اپنی بیوی کو ملاقات کے لیے فیصل آباد بلایا تھا جس کے بعد پولیس کی خصوصی ٹیم نے اس کی بیوی کو فیصل آباد پہنچایا اور حساس ادارے اور پولیس کی ٹیم نے سول لباس میں اس کی بیوی کا پیچھا کیا اور جب وہ بیوی سے ملاقات کے لیے نکلا تو پولیس نے بغیر کسی مزاحمت کے ملزم عابد ملہی کو گرفتار کرلیا۔


ای پیپر