شہبازشریف کی اہلیہ بیگم نصرت شہباز سے متعلق اہم خبر
13 اکتوبر 2018 (21:42) 2018-10-13

لاہور:پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف سے ان کی اہلیہ بیگم نصرت شہبازنے جیل میں ملاقات کی، ملاقات کرنے والوں میں بیٹے حمزہ شہباز ، سلمان شہباز اور بہو زینب بھی شامل ہیں، شہبازشریف کو آشیانہ ہاوسنگ اسکینڈل کیس میں نیب نے گرفتار کر رکھا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف سے جیل میں ملاقات کیلئے ان کی اہلیہ نصرت شہبازشریف پہنچ گئیں۔ نصرت شہباز نے شہبازشریف سے ان کی طبیعت کے بارے پوچھا اور ان سے ادویات کے باقاعدگی سے استعمال سے متعلق بھی دریافت کیا۔ اس موقع پر ملاقات میں بیٹے حمزہ شہباز ، سلمان شہباز اور بہو زینب بھی شامل ہیں۔واضح رہے نیب لاہور نے صدر ن لیگ شہبازشریف کو گزشتہ روز صاف پانی کیس میں پوچھ گچھ کیلئے طلب کیا تھا جبکہ انہیں نیب آفس میں آشیانہ کیس میں گرفتار کرلیا۔

نیب نے الزام عائد کیا ہے کہ شہبازشریف نے چوہدری لطیف کی کمپنی کا ٹھیکہ منسوخ کرکے قومی خزانے کوکروڑوں کا نقصان پہنچایا ہے۔ نیب نے جب شہبازشریف کو احتساب میں عدالت میں پیش کیا۔ جہاں پرن لیگ کے سینکڑوں کارکنان نے ان کی بکتر بند گاڑی کوگھیر لیا اور نوازشریف، شہبازشریف کے حق میں نعرے لگائے۔ تاہم احتساب عدالت نے شہبازشریف کو مزید تفتیش کیلئے 10روزہ ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر رکھا ہے۔

دوسری شہبازشریف کی دوسری بیوی تہمینہ درانی نے شادی سے لیکر اب تک مختلف مواقعوں پرشہبازشریف کے حق میں یا پھر ان کی حکومتی کارکردگی کیخلاف ٹویٹس کیے۔ اب ن لیگی کارکنان میں تشویش پائی جارہی ہے کہ تہمینہ درانی نے شہبازشریف کی گرفتاری پرکوئی بیان یا ٹویٹ کیوں نہیں کیا؟ وہ بھی ایسے موقعے پرجب سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کی گرفتاری پرن لیگ اور دوسری اپوزیشن جماعتوں میں کھلبلی مچی ہوئی ہے۔

تمام جماعتوں کے رہنما شہبازشریف کی گرفتاری کوحکومت اور نیب کی جانب سے انتقامی کاروائی قرار دے رہے ہیں۔ ان حالات میں ایک سوشلسٹ اہلیہ کا کوئی بیان سامنے نہ آنا مضحکہ خیز بات ہے۔بعض لوگوں کا خیال ہے کہ اگر شہبازشریف اور تہمینہ درانی کے درمیان کوئی اختلافات ہیں توپھر بھی تہمینہ درانی کوان کے حق میں یا مخالفت میں کوئی بیان ضرور دینا چاہیے تھا۔


ای پیپر