سیالکوٹ کا شہری راتوں رات کروڑ پتی بن گیا ۔۔۔ مگر کیسے ؟
13 اکتوبر 2018 (20:22) 2018-10-13

سیالکوٹ :کراچی اور جھنگ کے بعد سیالکوٹ کا ایک شہری بھی راتوں رات کروڑ پتی بن گیا ، جس کے بینک اکانٹ سے کئی کروڑ روپے کی ٹرانزیکشن کا انکشاف ہوا۔

سیالکوٹ کے شہری مذاکر حسین کے مطابق وہ نجی بینک میں اکانٹ کھلوانے گیا تو اس پر انکشاف ہوا کہ اس کے نام پر لاہور میں پہلے ہی اکاﺅنٹ کھلا ہوا ہے۔ جب بینک اسٹیٹمنٹ نکلوائی گئی تو 75 صفحات پر مبنی بینک اسٹیٹمنٹ کے مطابق اکاﺅنٹ سے 7 کروڑ 44 لاکھ 76 ہزار 322 روپے کی ٹرانزیکشن ہوئی ہے اور اکانٹ میں سوات، مینگورہ اور کراچی سے بھاری رقوم منتقل کی گئیں۔بینک نے شہری کے اکاﺅنٹ کے غلط استعمال کا تصدیقی لیٹر جاری کردیا۔متاثرہ نوجوان نے اس خدشے کا اظہار کیا کہ کہیں اس کا اکاﺅنٹ دہشت گردی کے لیے استعمال نہ کیا گیا ہو۔

واضح رہے کہ اچانک سے اکاﺅ نٹ میں اتنی بڑی رقم کی ٹرانزیکشن کا یہ کوئی پہلا کیس نہیں ہے۔ حال ہی میں کراچی میں ایک فالودہ شربت بیچنے والے شخص عبدالقادر کے اکانٹ میں بھی سوا دو ارب روپے ڈالے گئے تھے، تاہم وہ اپنے اکانٹ میں رقم کی منتقلی سے لاعلم تھا۔بعدازاں جھنگ کا ایک بیروزگار نوجوان اسد علی بھی اس وقت بیٹھے بٹھائے کروڑ پتی بن گیا ، جب اس کے بینک اکانٹ میں 17 کروڑ 30 لاکھ روپے نکل آئے تھے، جس پر ایف آئی اے نے نوجوان سے تحقیقات کیں۔

رواں ہفتے بھی ایسا ہی ایک کیس سامنے آیا تھا، جب کورنگی میں سرکاری ملازمت کرنے والی ایک خاتون کے اکانٹ سے کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن کا انکشاف ہوا۔واضح رہے کہ ملک میں بڑے بزنس گروپ ٹیکس بچانے کے لیے ایسے اکانٹس کھولتے ہیں، جنہیں 'ٹریڈ اکانٹس' کہاجاتا ہے اور جس کے نام پر یہ اکانٹ کھولا جاتا ہے، اسے رقم بھی دی جاتی ہے۔ذرائع کے مطابق اس طرح کے اکانٹس صرف پاکستان میں ہی کھولے جاتے ہیں اور دنیا کے دیگر حصوں میں ایسی کوئی مثال موجود نہیں۔


ای پیپر