Image Source : Twitter

شہباز شریف کیلئے بڑی خوشخبری
13 مارچ 2019 (19:55) 2019-03-13

لاہور:عجب کرپشن کی غضب کہانی ،مسلم لیگ ن کے قائد ،سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف ایک کےبعد ایک بڑی کیس میں باعزت بر ی ہو رہے ہیں جس سے لگتا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان جو آج سے پہلے خادم اعلیٰ پر کڑی تنقید کیا کرتے تھے ،لیکن آج عمران خان کی اپنی پنجاب حکومت خادم اعلیٰ کو کلین چٹ دے رہی ہے ،اب اس معاملہ کی اندرونی کہانی کیا ہے یہ کہنا قبل ازوقت ہو گا ،لیکن ان سب کے باوجود یہ شہباز شریف کیلئے انہتائی بڑی خوشخبری ہے کہ ان کے مخالفین ہی ان کاموں کی تعریف کر رہے ہیں ۔

لیپ ٹاپ سکیم میں گڑبڑ اور بدعنوانیوں کے الزامات سے بری قرار پانے کی خبر کے بعد اب پاکستان تحریک انصاف کی پنجاب حکومت نے سابق وزیراعلی شہبازشریف کے ایک اور منصوبے کو گھپلوں سے پاک قرار دیتے ہوئے اس میں گڑبڑ اور بدعنوانی کے الزامات مسترد کردئیے۔ پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں محترمہ مومنہ وحید کے سوال کے تحریری جواب میں لوکل گورنمنٹ کے وزیر راجہ بشارت نے ایوان کو بتایا کہ سابق دور حکومت میں سات شہروں میں صفائی کے نظام کو بہتر بنانے کے لئے ویسٹ مینجمنٹ کمپنیز قائم کی گئیں جن میں لاہور گوجرانوالہ سیالکوٹ راولپنڈی فیصل آباد ملتان اور بہاولپور شامل ہیں۔

انہوں نے کہاکہ یہ درست نہیں ہے کہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ پروجیکٹ میں اربوں روپے کے گھپلے ہوئے ہیں۔ راجہ بشارت جو پنجاب کے وزیر قانون بھی ہیں، نے جواب میں کہاکہ یہ بھی درست نہیں کہ گھوسٹ ملازمین کی تنخواہیں وصول کرنے میں کئی سیاستدان اور سرکاری افسران ملوث پائے گئے۔ انہوں نے بتایا کہ صرف گوجرانوالہ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں پروکیورمنٹ پراسیس میں بے ضابطگیوں کی بنا پر اینٹی کرپشن میں متعلقہ افراد پر مقدمہ درج ہے۔ مومنہ وحید نے سوال پوچھا تھا کہ کیا یہ درست ہے کہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ پروجیکٹ میں اربوں روپے کے گھپلے اور گھوسٹ ملازمین کی تنخواہیں وصول کرنے میں کئی سیاستدان اور سرکاری افسران ملوث پائے گئے ہیں۔

یاد رہے کہ لیپ ٹاپ سکیم میں بھی پنجاب حکومت کے اسمبلی میں دئیے گئے جواب میں شہبازشریف اور ان کی حکومت کو کلین چٹ دی گئی تھی۔ اب سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کے معاملے میںایک اور کلین چٹ شہبازشریف اور مسلم لیگ (ن) حکومت کو مل گئی ہے۔اس مرتبہ شہبازشریف کے حق میں گواہی وزیرلوکل گورنمنٹ راجہ بشارت کی طرف سے آئی ہے۔ دلچسپ امر یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور ان کی جماعت شہبازشریف اور مسلم لیگ (ن)پر سخت تنقید کرتی تھی لیکن اب خود ان کی اپنی زبان سے اپنے مخالفین کے حق میں گواہی آرہی ہے۔


ای پیپر