Source : Yahoo

مشرف کو وطن واپسی کیلئے آخری مہلت
13 جون 2018 (16:02) 2018-06-13

لاہور : سپریم کورٹ نے پرویز مشرف کو وطن واپسی کیلئے جمعرات کی دوپہر 2 بجے تک کی مہلت دے دی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ مشرف جمعرات دوپہر2 بجے تک آ جائیں ورنہ قانون کے مطابق فیصلہ کر دیں گے،سابق صدر کو رعشہ کی بیماری ہے تو الیکشن میں مکا کیسے دکھائیں گے۔

بدھ کو چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پرویز مشرف کی واپسی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ ۔وکیل پرویز مشرف نے کہ سابق صدر بیمار ہیں،علاج کیلئے بیرون ملک جانے کی سہولت برقرار رکھیں ،اس پر جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ شرائط کی بجائے پہلے پاکستان آجائیں ،وکیل پرویز مشرف نے کہا کہ ان کو رعشہ کی بیماری ہو چکی ہے،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ اگر انہیں رعشہ ہے تو الیکشن میں مکا کیسے دکھائیں گے ،بیمار ہیں تو ایمبولینس میں آجائیں پہلے آئیں پھر دیکھیں گے.

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ اتنی سہولت دی کہ آجائیں گرفتار نہیں کیا جائے گا،وکیل مشرف نے کہاکہ علاج کیلئے بیرون ملک جانے کی اجازت بھی بررقراررکھیں ۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا سپریم کورٹ واپسی کیلئے پرویز مشرف کی شرائط کی پابند نہیں، کہہ چکے مشرف کو تحفظ دیں گے، لکھ کر گارنٹی دینے کے پابند نہیں، مشرف کمانڈو ہیں تو آکر دکھائیں، سیاستدانوں کی طرح آ رہا ہوں کی گردان نہ کریں، اتنا بڑا کمانڈو خوف کیسے کھا گیا، ملک ٹیک اوور کرتے وقت خوف نہیں آیا ؟،چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ سابق صدر کے پاس جمعرات کی دوپہر دو بجے تک کاوقت ہے آجائیں ،ورنہ درخواست پر قانون کے مطابق فیصلہ کردیں گے ، ملک واپس آئیں ورنہ کاغذات نامزدگی کی جانچ نہیں ہونے دیں گے ۔


ای پیپر