Osama Satti,murderers,confessed,innocent,citizen
13 جنوری 2021 (15:11) 2021-01-13

اسلام آباد : مقتول اسامہ ستی کے قتل میں ملوث ملزمان نے اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے ایک بے گناہ شہری کو کو قتل کیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کے مقتول اسامہ ستی کے قتل کیس کی سماعت آج انسداد دہشت گردی کی عدالت میں ہوئی۔ جج راجہ جواد عباس نے کیس کی سماعت کی۔ اس موقع پر مقتول اسامہ ستی کیس کے تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان کی طرف سے اعتراف کیا جا رہا ہے کہ انہوں نے ایک بے گناہ شہری کو قتل کیا ہے۔ جس پر جج نے پوچھا کہ کیا ان کا بیان ریکارڈ کر لیا گیا ہے۔ تفتیشی افسر کا کہنا تھا کہ ملزمان کی ابھی تک مجسٹریٹ کے سامنے بیان قلمبند نہیں کیا جا سکا ہے۔

عدالت میں پولیس کی طرف سے ملزمان کے مزید 5 روزہ ریمانڈ کی استدعا کرتےہوئے موقف اختیار کیا گیا کہ جے آئی ٹی کی تفتیش کیلئے ابھی مزید وقت درکار ہے۔جس پر عدالت نے تفتیشی افسر کی استدعا قبول کرتے ہوئے ملزمان کا مزید 5 روزہ ریمانڈ منظور کر لیا۔ اس سے قبل عدالت میں پیشی کے موقع پر ملزمان کو سخت سکیورٹی میں لایا گیا۔ میڈیا اور عوام کی وجہ سے انہیں عدالت کے عقبی راستے سے کمرہ عدالت میں لے جایا گیا۔

یاد رہے کہ اسلام آباد میں اے ٹی ایس اہلکار کی فائرنگ سے ایک نوجوان اسامہ ستی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا تھا اور اس کے انصاف کے حصول کیلئے پورا پاکستان سوشل میڈیا پر اپنا احتجاج بلند  کرنے میں مصروف ہے۔اسی سلسلہ میں آج وزیر اعظم نے اسامہ ستی کے والد سے ملاقات کی۔


ای پیپر