خوبصورت اور نوجوان لڑکیوں کیلئے چاند پر ”فری“ جانے کا سنہر موقع
13 جنوری 2020 (16:51) 2020-01-13

ٹوکیو:تین سال بعد 2023 میں چاند کے پہلے نجی دورے کے لیے منتخب ہونے والے جاپانی ارب پتی 44 سالہ فیشن و آرٹ ڈیزائنر یساکو مائزاوا نے چاند کے سفر کے لیے خاتون ساتھی کی تلاش شروع کردی۔

یساکو مائزاوا کو ستمبر 2018 میں امریکی سائنسی ادارے اسپیس ایکس نے چاند کے پہلے نجی سیاحتی دورے کے لیے منتخب کیا تھا۔اسپیس ایکس کی جانب سے ابتدائی طور پر 2018 میں نجی خلائی سیاحتی دورے کے پروگرام کے تحت 2 افراد کو چاند پر بھجوایا جانا تھا تاہم بعد ازاں کمپنی نے پروگرام کو چند سال تک مخر کرتے ہوئے 2023 تک نجی سیاحتی دوروں کے آغاز کا اعلان کیا تھا۔منصوبے کے تحت اسپیس ایکس چاند کے دورے کی خواہش رکھنے والے دنیا کے امیر ترین افراد کو چاند کا دورہ کروائے گا اور منصوبے کے تحت بیک وقت صرف 2 افراد کو ہی چاند پر لے جایا جائے گا۔

چاند کے دورے کے لیے اسپیس ایکس اپنے ہی راکٹ استعمال کرے گا تاہم اسے امریکی خلائی تحقیقی ادارے(ناسا) کی معاونت حاصل رہے گی۔اسی منصوبے کے تحت 2023 میں جاپانی فیشن و آرٹ ڈیزائنر 44 سالہ یساکو مائزاوا کو سب سے پہلے چاند پر بھجوایا جائے گا تاہم وہ چاہتے ہیں کہ ان کے ساتھ کوئی خوبرو اور بہادر خاتون بھی چاند پر جائے۔چاند کے پہلے نجی سیاحتی دورے کے لیے منتخب ہونے والے ارب پتی جاپانی فیشن ڈیزائنر نے خوبرو، نوجوان اور بہادر خاتون تلاش کرنے کے لیے اپنی ویب سائٹ پر دنیا بھر کی خواتین سے درخواستیں طلب کرلیں۔

یساکو مائزاوا کی جانب سے اپنی ویب سائٹ پر جاری کیے گئے اشتہار کے مطابق انہیں کم سے کم 20 سال یا اس سے زائد عمر کی بہادر اور خوبرو خاتون درکار ہے۔ویب سائٹ پر بتایا گیا کہ ارب پتی جاپانی فیشن ڈیزائنر چاند کے دورے کو یادگار بنانے کے لیے کسی خوبرو خاتون کے ساتھ چاند کا دورہ کرنا چاہتے ہیں اس لیے انہوں نے خواہش مند خواتین سے درخواستیں طلب کی ہیں۔اشتہار میں یساکو مائزاوا کا تعارف بھی دیا گیا ہے کہ وہ کون ہیں اور وہ کس طرح ارب پتی بنے۔


ای پیپر