gang rape,karachi,3 arrest,Police,investigation,daughter father,video viral
13 فروری 2021 (11:50) 2021-02-13

کراچی : گلشن حدید کے علاقے میں کالج جانے کیلئے گھر کی نکلی فرسٹ ایئر کی طالبہ کے ساتھ اجتماعی زیادتی ٗ تینوں ملزمان کو پولیس نے گرفتار کر لیا۔ لڑکی کی اپنے والد کے گلے لگ کر رونے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ٗپاکستانی عوام نے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے گلشن حدید میں تین ملزمان نے کالج  جاتے ہوئے دو دن پہلے اس بچی کو اغوا کیا اور گزشتہ روز (جمعہ کو) اس بچی کو ڈیفنس کے علاقے میں پھینک کر فرار ہوگئے۔پولیس کی بچی کی نشاندہی پر ملزمان کو گرفتار کر لیا ہے۔ملزمان کے نام عادل ٗ فواداور سمیع ہیں۔

بچی کے والد نے روتے ہوئے ایک بیان میں کہا کہ ظالموں کو سزا ملنی چاہیے۔جب ڈیفنس پولیس نے بتایا کہ آپ کی بچی بے ہوش حالت میں ملی ہے تو پیروں تلے زمین نکل گئی۔میری بیٹی فرسٹ ایئر کی طالبہ ہے۔9 فروری کو گھر سے کالج گئی تھی وقت پر واپس نہ آئی تو دو دن تک پاگلوں کی طرح تلاش کرتا رہا۔مگر پھر پولیس کا فون آگیا کہ آپ کی بیٹی بے ہوشی کی حالت میں ملی ہے۔ میری بیٹی کو 14 گھنٹے بعد ہوش آیا تو اس نے بتایا کہ کیا واقعہ ہوا ہے۔

پولیس کا اس بارے میں کہنا ہے کہ جو ملزمان ہیں ان کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور ان سے تفتیش کا عمل ابھی جاری ہے۔مزید جیسے جیسے تفتیش آگے بڑھتی جائے گی۔ مزید معلومات ہم آپ لوگوں سے شیئر کرتے رہیں گے۔ لڑکی کی میڈیکل رپورٹ کے آنے کے بعد مزید کارروائی کی جائیگی ۔ تفتیش کیلئے سنیئر افسران پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔


ای پیپر