فائل فوٹو

اہم ترین کیس میں بلاول بھٹو زرداری نیب کے سامنے پیش
13 فروری 2020 (16:17) 2020-02-13

راولپنڈی:پی پی پی کے چیئرمین بلاول بھٹو جے وی اوپل کیس میں قومی احتساب بیورو میں پیش ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق بلاول کی آمد کے  موقع پر سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں جبکہ نیب راولپنڈی آفس کے باہر بھی پولیس کی بھاری نفری تعینات رہی۔

یاد رہے کہ نیب نے بلاول کو زرداری گروپ کمپنی کے 2008 سے 2019 تک کا تمام ریکارڈ لانے کی ہدایت کی تھی جبکہ پی پی پی چیئرمین سے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی فہرست بھی طلب کی گئی ہے۔

اپنی قانونی ٹیم سے مشاورت کے بعد بلاول بھٹو نے نیب میں پیش ہونے کا فیصلہ کیا تھا۔بلاول بھٹو کو نیب کی جانب سے سوالنامہ بھی دیا گیا تھا۔

ان پر اپنی ذاتی کمپنی کے لئے ایک ارب 22 کروڑ روپے جعلی اکاؤنٹ سے نکلوانے کا الزام ہے۔

بلاول بھٹو نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ وہ چھوٹے تھے تاہم آڈٹ رپورٹ میں دستخط موجود ہے۔ نیب نے آڈٹ رپورٹ اور بلاول کے دستخط شدہ دستاویزات حاصل کر لی ہیں۔چئیرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے انکوائری کو انویسٹی گیشن میں تبدیل کرنے کی منظوری بھی دی تھی۔بلاول بھٹو کو یہ چوتھی مرتبہ طلب کیا جارہا ہے تاہم وہ اب تک صرف ایک بار ہی پیش ہوئے ہیں۔

گزشتہ سال دسمبر میں ترجمان نیب کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری نے بذریعہ خط آگاہ کیا ہے کہ وہ 15 جنوری کے بعد سے نیب کے سامنے پیش ہونے کے لیے تیار ہیں۔پیشی سے قبل وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی گاڑی بلاول کی پروٹوکول کی گاڑی سے ٹکرا گئی۔

حادثے کے وقت وزیر اعلیٰ سندھ اور راجہ پرویز اشرف گاڑی میں موجود تھے۔حادثہ نیب اولڈ ہیڈکوارٹر میں داخلے کے وقت پیش آیا۔


ای پیپر