Image Source : Twitter

پرائیویٹ ہسپتال بند ۔۔۔؟ حکومت کا ایک اور زبردست اعلان
13 فروری 2019 (19:42) 2019-02-13

ملتان:وزیر صحت پنجاب یاسمین راشد نے کہا ہے کہ حکومت سرکاری ہسپتالوں کے آ ئوٹ ڈور میں شام کے وقت پرائیویٹ کلینک شروع کر رہی ہے، جس سے نجی طور پر علاج کرانے والوں کو سہولت میسر آ سکے گی۔

 یاسمین راشد نے  پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری ہسپتالوں کے آ ئوٹ ڈور میں نجی کلینکس شروع ہونے سے بہت سے لوگوں کے پرائیوٹ ہسپتال بند ہو جائیں گے۔ جو نجی طور پر علاج کرانا چاہتا ہے، ان کے لئے سرکاری ہسپتالوں کے آ ئوٹ ڈور میں کلینکس شروع کر رہے ہیں۔یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ صحت کی سہولتوں کیلئے حکومت وسائل فراہم کر رہی ہے، کوشش ہے سرکاری ہسپتالوں میں علاج کی تمام سہولتیں میسر ہوں۔

پرائمری اور سیکنڈری ہیلتھ میں ادویات کیلئے 32 ارب مختص کیے ہیں۔ صحت کارڈ پر کسی سیاسی جماعت کا اثر نہیں، غریب آدمی کسی بھی سیاسی جماعت سے ہو اسے کارڈ فراہم کیا جائے گا۔ علاج کیلئے آنیوالے مریضوں کو کھانا اور کرایہ بھی دیا جائے گا۔ صحت کارڈ کے تحت سرکاری اور نجی ہسپتالوں میں علاج ہو سکے گا۔انھوں نے مزید کہاکہ 22 فروری سے جنوبی پنجاب میں صحت کارڈ کا اجرا کیا جائے گا جبکہ مارچ کے آخر تک 4 اضلاع میں کارڈ تقسیم کیے جائیں گے۔


ای پیپر