قومی اسمبلی کے پہلے دن تلاوت کی جانے والی آیت اور اس کا ترجمہ
13 اگست 2018 (14:33) 2018-08-13

اسلام آباد:15ویں قومی اسمبلی کے افتتاحی اجلاس میں پڑھی گئی قرآنی آیات کا ترجمہ ’’اللہ رب العزت کے نام سے شروع جو نہایت مہربان اور ہمیشہ رحم فرمانے والا ہے۔ اللہ رب العزت نے ایسے لوگوں سے وعدہ فرمایا ہے جس کا ایفا اور تعمیل امت پر لازم ہے جو تم میں سے ایمان لائے اور نیک عمل کرتے رہے وہ ضرور انہی کو زمین میں خلافت یعنی امانت اقتدار کا حق عطا فرمائے گا۔ جیسا کہ اس نے ان لوگوں کو حق حکومت بخشا تھا جو ان سے پہلے تھے اور ان کے لئے ان کے دین کو جسے اس نے ان کے نئے پسند فرمایا ہے۔ غلبہ اور اقتدار کے ذریعے مضبوط اور مستحکم فرما دے گا اور وہ ضرور اس تمکن کے باعث جو کہ ان کے پچھلے خوف کو جو ان کی سیاسی، معاشی اور سماجی کمزوری کی وجہ سے تھا ان کے لئے امن و حفاظت کی حالت سے بدل دے گا۔ وہ بے خوف ہو کر میری عبادت کرینگے۔ میرے ساتھ کسی کو شریک نہیں ٹھہرائیں گے یعنی صرف میرے حکم اور نظام کے تابع رہیں گے اور جس نے اس کے بعد ناشکری یعنی میرے احکام سے انحراف اور انکار کو اختیار کیا تو وہی لوگ فاسق اور نافرمان ہوں گے اور تم نماز کے نظام کو قائم رکھو اور زکوٰۃ کی ادائیگی کا انتظام کرتے رہو اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی مکمل اطاعت بجا لاؤ تاکہ تم پر رحم فرمایا جائے یعنی غلبہ و اقتدار، استحکام اور امن و حفاظت کی نعمتوں کو برقرار رکھا جائے۔


ای پیپر