نواز شریف اصولوں پر سمجھوتہ کرنے پر تیار نہیں : اسحاق ڈار
12 نومبر 2019 (18:10) 2019-11-12

لندن :سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ نواز شریف نے الیکشن 2018سے پہلے اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے وطن واپس نہ آنے اور لندن میں ہی قیام کرنے کی ڈیل کی آفر مسترد کر دی تھی اور پاکستان آ کر مقدمات کا سامنا کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

ایک انٹرویو میں سابق وزیر خزانہ نے کہا کہ سابق وزیر اعظم اصولوں پر سمجھوتہ کرنے کو تیار نہیں ، نواز شریف کی علاج کیلئے بیرون ملک روانگی کسی ڈیل کا حصہ نہیں ، ان کی حالت تشویشناک ہے، پنجاب حکومت کا تشکیل دیا گیا میڈیکل بورڈ ان کے پلیٹلیٹس گرنے کی وجوہات کی تشخیص میں یکسر ناکام رہا جس کے بعد ان کو علاج کیلئے بیرون ملک بھجوانے کا فیصلہ کیا گیا۔

انہوں نے مزید کہاکہ اصولوں پر سمجھوتہ نہ کرنے کی پاداش میں نواز شریف کو جھوٹے اور بے بنیاد مقدمات پر سزا سنائی گئی، حکومتی وزیر داخلہ کا بھی کہنا ہے کہ نواز شریف اسٹیبلشمنٹ با رے سخت رویہ اختیار نہ کرتے تو وہ چوتھی مرتبہ وزیر اعظم بن جاتے۔ نواز شریف پارلیمنٹ اور سول بالادستی کے خواہاں ہیں اور چاہتے ہیں کہ تمام ادارے اپنی حدود میں رہ کر کام کریں۔ نوازشریف نے اپنے اصولی بیانیہ کیلئے قربانی دی ہے اور وہ اس سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، اگر ادارے پارلیمنٹ کی بالادستی نہیں چاہتے تو آئین میں ترمیم کر کے حکومت کے پارٹنر بن جائیں۔


ای پیپر