مالی ‘باورچی کے اکاونٹ کھلوانے کے بانی کون ؟
12 نومبر 2018 (22:54) 2018-11-12

کراچی:سابق گورنر سندھ محمد زبیر نے کہا ہے کہ مالی ‘باورچی کے اکاونٹ کھلوانے کے بانی جہانگیرترین ہیں ‘حکومت بری طرح ناکام ہوچکی ‘ احتساب کا عمل عمران خان کی خواہش پرنہیں ہونا چاہیے‘ہمیں کوئی خوف نہیں‘50 لاکھ گھر منصوبہ عمران خان کا اپنے دوست انیل مسرت کو فائدہ پہنچانے کیلئے ہے ۔

گزشتہ روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق گورنر سندھ اور مرکزی رہنما پاکستان مسلم لیگ (ن) محمد زبیر نے کہا کہ حکومت بری طرح ناکام ہوچکی ہے‘مالی اورباورچی کے اکاونٹ کھلوانے کے بانی جہانگیرترین ہے،عمران خان نے پچھلے دوتین سال بہت شورمچایا،پی ٹی آئی چورڈاکوکی زبان اسمبلی کے اندراورباہراستعمال کررہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ احتساب عمران خان کی خواہش پرنہیں ہونا چاہیے،ہمیں احتساب کا کوئی خوف نہیں،عمران خان نے پرویز الہی کو پنجاب کا سب سے بڑا ڈاکو کہا ،مدینے کی ریاست میں تو یہ نہیں تھاکہ اپنے ارد گرد چور ڈاکو بٹھا اور دوسرے پرا نگلی اٹھا ، جہانگیر ترین ، علیم خان ، انیل مسرت ، زلفی بخاری جیسے لوگوں سے حکومت بھری پڑی ہے ، انہوں نے کہا کہ کبھی ایسا ہوا کہ حکومت کا ملازم ٹاک شو میں حصہ لے اور اپنی خواہشات کا اظہار کرے ،عمران نے خود کہا زلفی بخاری پاکستانی نہیں ، پھربھی انہیں کابینہ میں لے لیا ۔

سابق گورنر سندھ نے کہا کہ عمران خان کے دوست انیل مسرت کو فائدہ پہنچانے کیلیے50 لاکھ گھروں کا کام کیا جارہا ہے ، مراد سعید کہتے تھے پہلے 200 ارب ڈالر آئیں گے،کہاں ہیں وہ ڈالرز؟انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت کے پاس کوئی پلان نہیں ہے، ہم وہ سب نہیں کرنا چاہتے جو پی ٹی وی پر ہوا، حکومت نے گورنر ہاوسز کے اخراجات میں اضافہ کیا ہے، ہم توڑپھوڑکی سیاست نہیں کرنا چاہتے۔مسلم لیگ ن کے رہنما کا کہناتھا کہ عمران خان نے کہا تھا عمران خان صاحب! چوراورڈاکو آپ کے اردگرد بیٹھے ہیں،نیب کا افسرمیڈیا کے سامنے کیس کی تفصیلات بتارہا ہے،پرویز الہی پنجاب کے سب سے بڑے ڈاکو ہیں، پرویز الہی کا احتساب کیوں نہیں کیا جاتا، اب عمران یا تو کارروائی کریں یا اپنے الفاظ پر معافی مانگیں ،ان کا کہناتھا کہ مدینہ کی ریاست میں چور ڈاکو کو ساتھ نہیں بٹھایا جاتا،نیب کا معیار آپ سب کو معلوم ہے۔


ای پیپر