utarkhand-strom,Andhra Pradesh,india,West Bengal,Delhi-NCR
12 May 2021 (15:33) 2021-05-12

اترکھنڈ :بھارت میں جہاں پہلے ہی عالمی وبا نے تباہی مچا رکھی ہے وہیں ایک اور قدرتی آفت نے بھی کئی علاقوں کو اپنے گھیرے میں لے لیا ۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کے اتر کھنڈ کے علاقے میں اُس وقت تباہی مچ گئی جب بادل پھٹنے سے سیلاب آگیا جس نے متعدد مکانات اور پورے کے پورے گائوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ،بادل پھٹنے سے شانتی ندی میں طغیانی آگئی اور اس نے ندی سے متقصل شانتی بازار میں تباہی مچادی۔

رپورٹ کے مطابق کلاؤڈ برسٹ’ ایک ایسی موسمی صورتحال کو کہتے ہیں جس میں بہت تھوڑے وقت میں بہت زیادہ بارش پڑجاتی ہے۔ اِس دوران شدید گرج چمک کے ساتھ بڑے سائز کے اولے بھی پڑسکتے ہیں اور چند ہی منٹ میں بارش کی مقدار 25 ملی میٹر (تقریباً ایک انچ) تک پہنچ سکتی ہے۔

اتر کھنڈ کے علاقے میں شدید طغیانی نے سیلابی صورت حال پیدا کردی، سیلابی ریلے کے باعث کئی عمارتیں زمین بوس ہوگئیں، جن میں اتراکھنڈ کے دیوپریاگ کا آئی ٹی آئی ٹاور بھی شامل ہے،قدرتی آفت کے نتیجے میں کافی مالی نقصانات ہوچکا ہے۔

مقامی پولیس نے واقعے کے نقصانات کی تفصیلات شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ ابھی تک کم وبیش بارہ دکانیں تباہ ہوچکی ہیں، دیوپریاگ نگر سے بس اڈے کی جانب آنے والا راستہ اور پل مکمل طور پر بہہ گیا ہے، جس کے باعث شانتی بازار میں کروڑوں کا نقصان ہونے کا ابتدائی اندازہ ہے تاہم ابھی تک کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ کرونا کے باعث لگائے گئے کرفیو کی وجہ سے علاقہ بڑے نقصان سے بچ گیا ہے۔


ای پیپر