چیئرمین ہائر ایجوکیشن کی غیر قانونی تقرری ،نیب کا نواز شریف کیخلاف تحقیقات کا فیصلہ
12 مارچ 2018 (21:44) 2018-03-12

اسلام آباد:ایک بعد ایک نواز شریف کی مشکلات میں اضافہ ہو تا جار ہا ہے ،پانامہ کا ہنگامہ ختم نہیںہوا ن لیگ کے گر د گھیرا تنگ سے تنگ تر ہوتا جا رہاہے ۔عدلیہ مخالف مہم سمیت بہت سے ایشو ز میں ن لیگی ایم این ایز پکڑ میں آچکے ہیں وہیں شہباز شریف اور سعد رفیق بھی نیب کے شکنجے میں ہیں ۔اور اب نیب نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف ہائر ایجو کیشن کمیشن کے چیئرمین مختار احمد کی مبینہ غیر قانونی تقرری سے متعلق تحقیقات کا فیصلہ کیا ہے۔نیب کے اعلامیے کے مطابق قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت ایک اجلاس نیب ہیڈ کوارٹرز اسلام آباد میں منعقد ہوا، جس میں مختلف امور پر غور کیا گیا۔ اجلاس میں سابق وزیر اعظم نواز شریف اور اسٹیبلشمنٹ ڈویڑن کے افسران کے خلاف ہائر ایجوکیشن کمیشن کے چیئرمین مختار احمد کی مبینہ غیر قانونی تقرری کی شکایت کی جانچ پڑتال کا فیصلہ کیا گیا۔


اجلاس میں راولپنڈی اسلام آباد میں نیب میں غیر قانونی نجی کوآپریٹو ہائوسنگ سوسائٹیز کے خلاف جاری انکوائریوں اور انویسٹی گیشن پر اب تک کی پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔ چیئرمین نیب نے ڈی جی نیب راولپنڈی کوہدایت کی کہ عوام کی عمر بھر کی لوٹی گئی جمع پونجی کی واپسی نہ صرف یقینی بنانے میں قانون کے مطابق اقدامات اٹھائے جائیں بلکہ تفتیش کو بروقت مکمل کر بدعنوان عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے۔ چیئرمین نیب نے عوام سے بھی کہا کہ وہ اپنی عمر بھر کی جمع پونجی صرف اور صرف قانون کے مطابق قائم نجی کوآپریٹو ہاﺅسنگ سوسائٹیز میں پوری تسلی اور اطمینان کے بعد لگائیں۔


ای پیپر