چیئرمین سینٹ کا فیصلہ ہو گیا ،صادق سنجرانی ایوان بالا کا سلطان منتخب
12 مارچ 2018 (17:59)

اسلام آباد : ایوان بالا کا سلطان صادق سنجرانی منتخب ہو گئے ، 103ارکان نے ووٹ کاسٹ کیے ۔چیرمین سینٹ اور ڈپٹی چیئرمین کیلئے ووٹنگ کا عمل مکمل ہو گیا ۔اپوزیشن اور حکومت کی طرف سے کانٹے دار مقابلہ ہوا ۔تمام بڑی جماعتوں نے ایک دوسرے کے ساتھ رابطے کیے ۔اس سے قبل نواز شریف نے رضا ربانی کا نام متفقہ طور پر پیش کیا تھا جس کو پیپلزپارٹی کی طرف سے مستر د کر دیا گیا تھا ۔ ایوان میں صاد ق سنجرانی کو مبارکباد دی گئی ۔

سینیٹ میں اپوزیشن کے اتحاد نے بلوچستان سے تعلق رکھنے والے صادق سنجرانی کو بالاخر نیا چیئرمین سینیٹ منتخب کرا لیا ہے۔ خفیہ رائے شماری کے ذریعے ہونے والے انتخاب میں 103 سینیٹرز نے اپنے ووٹ کاسٹ کیے۔ صادق سنجرانی کو 57 جبکہ ان کے مدمقابل حکومتی اتحاد کے امیدوار راجا ظفر الحق صرف 43 ووٹ حاصل کر پائے۔ سینیٹر سردار یعقوب خان ناصر نے نومنتخب چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی سے حلف لیا جس کے فوری بعد انہوں نے ایوان ِ بالا کے قائد کی نشست سنبھال لی۔

اس کے بعد ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کیلئے ووٹنگ ہوئی جس میں اپوزیشن کی جانب سے سلیم مانڈوی والا اور حکومتی اتحاد کی جانب سے عثمان کاکڑ مدمقابل آئے۔ سلیم مانڈوی والا 54 ووٹ لے کر ڈپٹی چیئرمین سینیٹ منتخب ہوئے جبکہ عثمان کاکڑ 44 ووٹ حاصل کر پائے۔ خیال رہے کہ ڈپٹی چیئرمین کے انتخاب میں ایم کیو ایم کے سینیٹرز نے حصہ نہیں لیا۔

صادق سنجرانی کو 57ووٹ ملے ۔گیلری سے ایک زرداری سب پر بھاری کے نعرے بھی لگائے گئے ۔راجہ ظفر الحق کو 46ووٹ ملے ۔


ای پیپر