حبیب جالب کی 25 ویں برسی منائی گئی
12 مارچ 2018 (16:51)

پا سکیں گے نہ عمر بھر جس کو
جستجو آج بھی اُس کی ہے


اسلام آباد:اردو شاعر حبیب جالب کی 25 ویں برسی پیر کو منائی گئی ۔ حبیب جالب 1928 میں دسوہہ ضلع ہوشیار پور موجودہ بھارتی پنجاب میں پیدا ہوئے۔ پہلا مجموعہ کلام برگ آوارہ کے نام سے 1957 میں شائع کیا۔ مختلف شہروں سے ہجرت کرتے ہوئے بالآخر لاہور میں مستقل آباد ہوگئے۔ آزادی کے بعد کراچی آ گئے اور کچھ عرصہ معروف کسان رہنما حیدر بخش جتوئی کی سندھ ہاری تحریک میں کام کیا۔

یہیں ان میں طبقاتی امتیاز کا شعور پیدا ہوا اور انہوں نے معاشرتی ناانصافیوں کو اپنی نظموں کا موضوع بنایا۔ 1956 میں لاہور میں رہائش اختیار کی ۔ ایوب خان اور یحیی خان کے دور آمریت میں متعدد بار قید و بند کی صعوبتیں جھیلیں۔ جالب نے 1960 اور 1970 کے عشروں بہت خوبصورت شاعری کی ۔ انہیں مشہور پاکستانی فلم زرقا میں رقص زنجیر پہن کر بھی کیا جاتا ہے لکھنے پر شہرت حاصل ہوئی۔اس کے علاوہ بھی انہوں نے کئی فلموں کے لئے گیت لکھے۔

ابتدا میں جگر مراد آبادی سے متاثر تھے اور روائتی غزلیں کہتے تھے۔ حبیب جالب کی سیاسی شاعری آج بھی عام آدمی کو ظلم کے خلاف بے باک آواز اٹھانے کا سبق دیتی ہے۔ حبیب جالب کی پوری زندگی فقیری میں گذری۔ ان کو نگار فلمی ایوارڈ دیا گیا۔ اس کے علاوہ 2006 سے ان کے نام سے حبیب جالب امن ایوارڈ کا اجرا کیا گیا۔ ان کا انتقال 12 مارچ 1993 کو ہوا۔


ای پیپر