مصباح الحق اور وقار یونس کی بورڈ سے رخصتی کی تلوار ٹل گئی
12 جنوری 2021 (19:32) 2021-01-12

لاہور : کرکٹ کمیٹی نے قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کر دیا۔ جنوبی افریقہ کے خلاف ہوم سیریز میں دوسری پوزیشن پر آنے کا کوئی پوائنٹ نہیں رہتا۔ سربراہ کرکٹ کمیٹی سلیم یوسف نے ٹیم مینجمنٹ کو واضح کردیا کہ افریقہ کیخلاف سیریز میں کسی قسم کا بہانہ قبول نہیں کیا جائے گا۔ 

خیال رہے کہ آج لاہور میں کرکٹ کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا جس میں قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور باؤلنگ کوچ وقار یونس نے خصوصی شرکت کی۔ کرکٹ کمیٹی نے اجلاس میں قومی کرکٹ ٹیم کی گزشتہ 16 ماہ کی کارکردگی کا جائزہ لیا اور کمیٹی نے قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیا لیکن ساتھ ہی ایک موقع بھی دیا کہ جنوبی افریقہ کیخلاف ہوم سیریز کیلئے جیت کے علاوہ دوسرا کوئی آپشن نہیں۔  

کرکٹ کمیٹی نے کہا کہ کوویڈ 19 کی وباء اور تجربہ کار کھلاڑیوں کی عدم موجودگی ٹیم کی مجموعی کارکردگی پر اثرانداز ہوئی۔ ٹیم منیجمنٹ کو قومی کرکٹ ٹیم سے متعلق اپنی حکمت عملی اور اہداف سے متعلق مکمل وضاحت دینے کی ضرورت ہے۔ سربراہ کرکٹ کمیٹی سلیم یوسف نے کہا کہ کرکٹ کمیٹی جنوبی افریقہ کے خلاف ہوم سیریز کے بعد ایک بار پھر قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لے گی۔ سلیم یوسف نے کہا کہ جنوبی افریقہ کے خلاف ہوم سیریز میں دوسری پوزیشن پر آنے کا کوئی پوائنٹ نہیں رہتا۔ 

عالمی وباء کے باعث صرف پاکستان کرکٹ ٹیم کو ہی نہیں بلکہ انٹرنیشنل کرکٹ کھیلنے والے دیگر ممالک کی ٹیموں کو بھی کوویڈ 19 کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے۔ کمیٹی کا ماننا ہے کہ ٹیم کے انتخاب اور فائنل الیون کے لیے کھلاڑیوں کے چناؤ میں بہتری ہونی چاہیےتھی۔ 

مصباح الحق اور وقار یونس کی آمد سے قبل چیف سلیکٹر محمد وسیم  نے بھی کرکٹ کمیٹی کو اپنی سلیکشن پالیسی سے متعلق بریفنگ دی۔ کرکٹ کمیٹی نے اجلاس میں ڈومیسٹک کرکٹ اور ویمنز کرکٹ کی کارکردگی کا بھی جائزہ لیا۔ 


ای پیپر