pti,electricity,power consumers,per unit,increase,pm imran khan
12 فروری 2021 (11:32) 2021-02-12

اسلام آباد :پی ٹی آئی کی حکومت کی طرف سے بہت ہی مختصر عرصے میں ایک بار بھر بجلی صارفین پر مہنگائی کا بم پھوڑ دیا گیا ہے اور اس بار فی یونٹ بجلی کی قیمت میں 82 پیسے اضافہ کرنے کی منظوری دیدی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق  نیشنل الیکٹرک اینڈ پاور ریگولیٹری اتھارٹی کی طرف سے منظوری دیدی گئی ہے کہ فی یونٹ کی قیمت میں 82 پیسے مزید اضافہ کر دیا جائے۔نیپرا کی طرف سے یہ فیصلہ گزشتہ مالی سال کی آخری سہ ماہی کی درخواست کے بعد کیا گیا ہے۔نیپرا کے فیصلےمیں بتایا گیا ہے کہ قیمت میں اس اضافے کے بعد بجلی کے صارفین پر مزید 84 ارب روپے کا بوجھ ڈالا گیا ہے۔اس فیصلے کا اطلاق وفاقی حکومت کی طرف سے منظوری اور نوٹیفکیشن جاری ہونے کے بعد ہو گا۔

بجلی کی قیمت میں اس اضافے کا اطلاق کے الیکٹرک پر نہیں ہو گا۔ اس سے قبل گزشتہ سال دسمبر میں نیپرا کی طرف سے بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 1 روپے 53 پیسے فی یونٹ اضافے کا فیصلہ کیا گیا تھا جس کے بعد حکومت کی طرف سے اس فیصلے کی منظوری دیتے ہوئے نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا تھا۔ 

یاد رہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت میں انتخابی نعروں کے برعکس بجلی اور دیگر اشیائے ضروریہ کی چیزوں میں مسلسل اضافے کا رجحان جاری ہے جبکہ وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے متعدد بار کہا جا چکا ہے کہ عوام کے درد کو سمجھتے ہیں لیکن تاحال حکومت اس درد کو ختم نہیں کر پا رہی ہے ۔


ای پیپر