District administration, PDM, Lahore jalsa, PTI, Maryam Nawaz
12 دسمبر 2020 (09:30) 2020-12-12

لاہور: ضلعی انتظامیہ کا پی ڈی ایم کو جلسے کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ ، پی ڈی ایم کی لاہور جلسے کی درخواست مسترد کر دی ، ضلعی انٹیلی جنس کمیٹی کے اجلاس کے بعد جلسے کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا گیا۔

ضلعی انتظامیہ کی جانب سے پی ڈی ایم کو لاہور مینار پاکستان جلسہ کرنے کی اجازت نہ دینے کا باقاعدہ نوٹیفیکیشن جاری کر دیا ہے۔ 

ضلعی انٹیلی جنس کمیٹی کے اجلاس کے بعد جلسے کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، نوٹیفکیشن کے مطابق عالمی وبا کے ایس او پیز اور اور تھریٹ الرٹ کی موجودگی میں جلسے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ اس موقع پر حکومتی وزرا کا کہنا ہے کہ اجازت نہ ملنے کے باوجود کسی بھی قسم کی سیاسی سرگرمی غیر قانونی تصور کی جائے گی۔

یاد رہے کہ قومی ادارہ برائے انسداد دہشتگردی (نیکٹا) نے ایک نیا تھریٹ الرٹ جاری کیا ہے جس کے مطابق اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ (پی ڈی ایم کے لاہور جلسے پر حملہ ہو سکتا ہے۔ 

نیکٹا کے مطابق دہشتگرد گروپوں نے حملوں کی منصوبہ بندی کی ہے اور آئندہ چند دنوں میں حملے کیے جا سکتے ہیں۔ الرٹ کے مطابق پی ڈی ایم سے منسلک سینئر سیاسی قیادت کو بھی نقصان پہنچنے کا خطرہ ہے۔ اس حوالے سے نیکٹا نے ہدایت کی ہے کہ سیکیورٹی انتظامات کو مزید بہتر اور سخت بنایا جائے۔

دوسری جانب وزیر داخلہ شیخ رشید نے پی ڈی ایم کی قیادت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جو تم کرو گے وہ ہم کریں گے۔

حکومت کی جانب سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ جلسہ کرنے کی صورت میں پی ڈی ایم کے تمام رہنماوں کے خلاف مقدمات درج کیے جائیں گے۔

اس کے علاوہ حکومت نے لاہور کے مختلف مقامات پر کنٹینرز کھڑے کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔


ای پیپر