فوٹو بشکریہ فیس بک

انتہا پسندی، مسلم دشمنی اور ناقص پالیسیاں مودی سرکار کو ریاستی انتخابات میں لے ڈوبی
12 دسمبر 2018 (15:05) 2018-12-12

نیو دہلی: انتہا پسندی، مسلم دشمنی اور ناقص پالیسیاں۔ مودی سرکار کو ریاستی انتخابات میں لے ڈوبی۔ راجستھان، چھتیس گڑھ، مدھیا پردیش میں بی جے پی کو شکست ہو گئی۔

بھارت میں عام انتخابات سے قبل بی جے پی کو سیمی فائنل میں بدترین شکست ہو گئی، راجستھان، چھتیس گڑھ، مدھیا پردیش میں کانگریس نے کامیابی کا جھنڈا گاڑا۔ بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے ریاستی انتخابات میں پارٹی کی شکست کو تسلیم کر لیا۔ کہتے ہیں عوام کے فیصلے کو عاجزی کے ساتھ قبول کرتے ہیں۔

راجستھان کی 199 نشستوں میں سے کانگریس کو 100 اور بی جے پی کو 73 سیٹوں پر کامیاب ہو گئی۔ چھتیس گڑھ میں کانگریس نے 68 سیٹوں کے ساتھ میدان مارا جبکہ بی جے پی کے ہاتھ 15 سیٹیں آئیں۔ ریاست مدھیہ پردیش میں کانٹے دار مقابلہ کے بعد کانگریس 114 اور بی جے پی 109 سیٹیں حاصل کرسکی۔ کانگریس نے آزاد امید واروں کو ملا کر حکومت بنانے کا اعلان کر دیا۔


ای پیپر