دھرنا مذاکرات کی ڈیڈلائن ختم ہونے کے بعد پنجاب بند ،شہری خوار
12 اپریل 2018 (22:42)

لاہور: حکومت کو دی گئی ڈیڈ لائن ختم ہونے کے بعد تحریک لبیک کا احتجاجی دھرنا پنجاب کے مختلف شہروں میں پھیل گیا، لاہور کے تمام داخلی اور خارجی راستے بند ، سڑکیں بلاک ہونے سے ہزاروں شہری پھنس گئے۔تفصیلات کے مطابق حکومت کو دی گئی ڈیڈ لائن ختم ہونے کے بعد تحریک لبیک کا احتجاج پنجاب کے مختلف شہروں میں پھیل گیا۔ کارکنوں کی جانب سے شہر کے داخلی اور خارجی راستے بلاک اور معروف شاہراوں کو بند کرنے کے نتیجے میں شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

لاہور میں میٹرو بس سروس معطل ہو چکی ہے جبکہ شاہدرہ کے قریب ٹرینوں کی آمدورفت بھی بند ہو چکی ہے۔ شیخوپورہ میں بھی کارکنوں نے سڑکوں پر نکلتے ہوئے مرکزی شاہراہ بند کر دی ہے، ٹیکسلا چوک پر بھی شروع ہونے والے دھرنے کی وجہ سے حسن ابدال، واہ کینٹ تا ٹیکسلا جی ٹی روڈ بلاک ہو چکی ہے، گجرانوالہ، گجرات، جہلم، قصور، اوکاڑہ، ساہیوال، خانیوال،ملتان، رحیم یار خان سمیت دیگر شہروں میں بھی تحریک لبیک کے کارکن سڑکوں پر نکل آئے ہیں۔دیکھنا یہ ہے کہ کیا حکومتی مذاکراتی ٹیم کامیاب ہوتی ہے یا نہیں رانا ثناءاﷲ کے مطابق مظاہرین کے تقریباََ تمام مطالبات مان لیے گئے ہیں۔

مذہبی جماعت کے رہنماﺅں سے کھلے دل سے بات چیت کی ہے ۔رانا ثناءاﷲ کا دعویٰ ہے کہ مذاکرات مذہبی رہمناﺅں کیساتھ کامیاب ہو گئے ہیں۔اگر یہ مذاکرات کامیاب نہیں ہوتے تو ڈر ہے کہ یہ کال پورے ملک میں اگر دیدی گئی تو ملک میں افرا تفری جیسی صورتحال پیدا ہو جائے گی ۔


ای پیپر