جے آئی یوتھ کنونشن
12 اپریل 2018

گزشتہ دنوں جماعت اسلامی پنجاب کے زیراہتمام جے آئی یوتھ کنونشن مینارِ پاکستان کی وسیع و عریض گراؤنڈ میں منعقد ہوا ۔یہ ایک تاریخی نوعیت کا اجتماع تھا جس میں لاہور سمیت پورے صوبے سے یوتھ کی بہت بڑی تعد اد نے شرکت کی ۔ نوجوانوں نے ہاتھوں میں پلے کارڈ ،بینرز ،پرچم اٹھا اور سراج الحق کے چہرے والے ماسک پہن رکھے تھے ۔ کارکنان نے انتھک محنت کر کے محض آٹھ گھنٹوں کے مختصر وقت میں اتنے بڑے پیمانے پر مینار پاکستان کی گراونڈ کو سجایا تھا ۔لائٹنگ کا بندوبست پوری طرح کام نہ کرنے کی وجہ سے نوجوانوں کی بڑی تعد اد اندھیرے میں بیٹھنے پر مجبور تھی ۔مگر اس کے باوجود ڈی جے بٹ نے اپنے مخصوص انداز میں ترانوں کو چلا کر حاضرین کے لئے ایک سماں باندھ دیا تھا۔امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کا استقبال خوبصورت آتش بازی اور فلک شگاف نعروں سے کیا گیا ۔امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’اتنی بڑی تعداد میں نوجوانوں کو دیکھ کر مجھے خوشی محسوس ہو رہی ہے ۔میں جب ہاسٹل میں تھا تو محنت مزدوری کر کے اپنے تعلیمی اخراجات کو برداشت کرتا تھا ۔میں جانتا ہوں طالب علموں کے مسائل کیا ہیں۔اس ملک کو ایک دیانتدار قیادت کی ضرورت ہے ۔جماعت اسلامی ایک اسلامی جماعت ہے ،جماعت اسلامی ایک جمہوری جماعت ہے ۔جماعت اسلامی ایک پروگریسو جماعت ہے ۔اس لئے 2018ء کے انتخابات میں ملک و قوم کی ترقی و خوشحالی کے لئے نوجوان ہمارا ساتھ دیں۔اگر میڈیا نے ہمیں جگہ نہ دی تو واٹس ایپ کے ذریعے ،فیس
بک کے ذریعے ،ٹویٹر کے ذریعے اپنا پیغام پاکستانیوں کو پہنچائیں گے ۔آج ترکی میں طیب اردوان کی حکومت قائم ہے۔ مغرب کے دباؤ کی وجہ سے اس کے ساتھ بھی میڈیا تعاون نہیں کر رہا تھا۔لیکن ان کی پارٹی کے کارکنان نے گھر گھر جا کر اور سوشل میڈیا کے ذریعے اپنا پیغام لوگوں تک پہنچایا ۔جس کا نتیجہ آپ کے سامنے ہے ۔ہمیں بھی گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے ۔ووٹ کی طاقت سے اس منافقت کی سیاست کا خاتمہ کرنا ہے ۔ظالم جاگیردارانہ سیاست کا خاتمہ کرنا ہے ۔مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی نے ڈلیور نہیں کیا ۔ قوم کے آزمودہ لوگ الیکشن قریب آتے ساتھ ہی پارٹیاں بدل رہے ہیں ۔ میں ان سے کہتا ہوں کہ آپ جس مرضی واشنگ مشین میں چلے جائیں قوم آپ کی حقیقت سے بخوبی آگاہ ہے ۔ لوٹوں، نوٹوں،ظالم سرمایہ داروں اور کرپشن کی سیاست مردہ باد ۔الحمد للہ پاک دامنی کے ساتھ ہم آپ کے سامنے کھڑے ہیں۔بہت سارے اداروں نے کوشش کی کہ مجھ پر کوئی الزام لگا سکیں، کوئی فائل سامنے لائیں مگر وہ ناکام رہے ۔میرے لوگ کراچی میں میئر رہے ہیں ،خیبر پختو نخوا میں وزارتوں میں رہے ہیں۔کسی پر کرپشن کا الزام نہیں ہے ۔سینٹ کے انتخابات میں ہمارے لوگوں کو بہت لالچ دیا گیا مگر وہ ثابت قدم رہے ۔میں آپ سے کہنا چاہتا ہوں کہ ہم ہی دیانتدار لوگ ہیں ۔ہم آپ کے خدمت گار ہیں ۔میں آپ سے وعدہ کرتا ہوں کہ جتنے بچے بھی پرائیویٹ اداروں میں زیر تعلیم ہیں ان کی فیس بھی ہماری حکومت ادا کرے گی ۔انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت بے روزگاروں کو بے روزگاری الاؤنس دے گی ۔ہر نوجوان کو بلا سود قرضے دیں گے۔ ہمارے پاس قرآن و سنت کی صورت میں مکمل منشور موجود ہے ۔اس ملک میں اسلامی حکومت قائم کرنا مقد س جہاد ہے۔ہم اگلا پروگرام لیاقت باغ راولپنڈی میں کر یں گے ۔انہوں نے شرکاء سے نعرے بھی لگوائے ۔ امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں آپ کو کامیاب یوتھ کنونشن پر مبارک باد پیش کرتا ہوں، یہ کرایے کے لوگوں کا کنونشن نہیں ہے ۔یہ سراج الحق کے ساتھ کلمہ طیبہ کا رشتہ رکھنے والوں کا کنونشن ہے ۔ہمارا ہمارے قائد سے رشتہ کالی کملی والے کا رشتہ ہے ۔یہ رشتہ کل بھی کامیاب تھا اور آج بھی کامیاب ہے۔ میرے نبیؐ کا امتی ملک کے اندر جس کام کے لئے کھڑا ہو گا، اسے شان ملے گی اسے آن ملے گی ۔عزت ملے گی وقار ملے گا۔اسے کامیابی ملے گی ۔میرے عزیزو! آج قائد اعظم کے پاکستان کا کیا
نقشہ پیش کروں ۔؟ان حکمرانوں نے پاکستان کا ستیا ناس کر دیا ہے ۔یہ ملک کو سیکولر بنانے کی بات کر رہے ہیں۔ انہیں کس نے اختیار دیا ہے کہ وہ ایسا کھلواڑ کریں؟یہ لوگ ملک کو لادین بنانے کی بات کرتے ہیں ، میں ان کو بتا دینا چاہتا ہوں کہ اس ملک کی 95فیصد نوجوان نسل پاکستان میں اسلامی شریعت کا نفاذ چاہتی ہے ۔اس ملک میں صرف کلمہ کا حکم چلے گا۔پاکستان کا اسلامی تشخص مجروح نہیں ہونے دیں گے ۔نواز شریف ، عمران خان ،زرداری اگر تمہارا ایجنڈا سیکولرازم ہے لبرل ازم ہے تو آؤ اس ایجنڈے پر پاکستان میں الیکشن لڑ کر دکھاؤ ۔ا گر ایک گلی میں بھی پنا ہ ملی تو یہ بڑی بات ہو گی ۔ووٹ اسلام کے نام پر لیتے ہو اور ایجنڈا سیکولر ازم کا نافذ کرتے ہو۔پاکستان نوجوانوں نے بنایا تھا ۔آج سب سے زیادہ نوجوان متاثر ہیں ۔حکمرانو ں نے حلال کے راستے بند اور حرا م کے راستے کھول دیئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کی بات سارے کرتے ہیں مگر ان کے مسائل کے حل کی بات کوئی نہیں کرتا ۔حکمرانو، میدان میں آؤ ۔ جماعت اسلامی کا کردار اپنا کر دکھاؤ ۔جماعت اسلامی جیسی بے داغ کر دار کی حامل کو ئی جماعت اس ملک میں موجود نہیں۔قبل ازیں امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے آئندہ انتخابات2018ء میں پچاس فیصدٹکٹ نوجوانوں کو دینے کا اعلان کرتے ہوئے علامتی ٹکٹ بھی جاری کئے ۔اس موقع پر صدر جے آئی یوتھ زبیر گوندل ،فرید احمد پراچہ،عبدالغفار عزیز، ذکر اللہ مجاہد، محمد عامر، رسل خان بابر،بلال قدرت بٹ نے بھی خطاب کیا جبکہ،محمد فاروق چوہان،علامہ عبد الستار عاصم و دیگر بھی موجود تھے ۔قومی ترانے کے ساتھ پروگرام کا اختتام کیا گیا ۔


ای پیپر