مولانا عادل کے قتل میں ملوث افراد کو جلد کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا: صدر مملکت عارف علوی
11 اکتوبر 2020 (15:59) 2020-10-11

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے مولانا عادل خان کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک دشمن عناصر کےعزائم کبھی کامیاب نہیں ہوں گے۔ جلد ہی اس واقعہ میں ملوث افراد کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔ بحیثیت قوم اتحاد ویگانت کا مظاہرہ کرتے رہیں گے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے کراچی میں جامعہ فاروقیہ کے عالم دین عادل خان کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ بھارت ملک میں فرقہ واریت پھیلانے کیلئے علماء کو نشانہ بنا رہا ہے۔ اپنے متعدد ٹویٹس میں وزیراعظم نے تمام علماء پر زور دیا کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ عوام پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنے کیلئے فرقہ واریت پھیلا کر بھارت کے مذموم عزائم کو ناکام بنا دیں۔

 عمران خان نے کہا کہ ہم نے گزشتہ مہینوں کے دوران ایسی متعدد کوششوں کو ناکام بنایا ہے۔ ہمارے خفیہ اور قانون نافذ کرنے والے ادارے عالم دین عادل خان کے قاتلوں کو بھی قانون کے کٹہرے میں لائیں گے۔ ادھر بری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے بھی معروف عالم دین عادل خان کے قتل پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے واقعے کی شدید مذمت کی اور اسے پاکستان کے دشمنوں کی طرف سے بدامنی کی کوشش قرار دیا۔ بری فوج کے سربراہ نے مجرموں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کیلئے سول انتظامیہ کو ہر ممکن تعاون کی فراہمی کی ہدایت کی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز کراچی میں نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کرکے جامعہ فاروقیہ کے مہتمم مولانا عادل خان اور ان کے ڈرائیور کو قتل کر دیا تھا۔ ذرائع کے مطابق مولانا عادل خان شاہ ایک شاپنگ سینٹر کچھ خریدنے کے لیے رکے تھے کہ اسا دوران اچانک مسلح افراد نے ان پر اندھا دھند فائرنگ کر دی اور فرار ہو گئے۔ حملے کے بعد انھیں زخمی حالت میں لیاقت نیشنل ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے ان کے انتقال کی تصدیق کردی تھی۔


ای پیپر