کسی کو قانون توڑنے کی اجازت نہیں دینگے :عمران خان
11 اکتوبر 2019 (22:19) 2019-10-11

اسلام آباد :وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کسی کو قانون توڑنے کی اجازت نہیں دے سکتے،کسی نے قانون توڑا تو قانون حرکت میں آئے گا،اگر کوئی خود بات کرنا چاہے تو دروازے بند نہیں ،مدرسہ اصلاحات سمیت اہم ایشوز پر کوئی بات کرنا چاہے تو اعتراض نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق جمعہ کو وزیراعظم خان کی زیر صدارت حکومتی ترجمانوں کا اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں جمعیت علمائے اسلام کے دھرنے کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا ۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں دھرنے کے شرکا سے سیاسی طور پر مذاکرات پر اتفاق کیا گیا۔ اجلاس میں اراکین نے رائے دی کہ مولانا فضل الرحمن کی طرف سے اعلان کردہ آزادی مارچ کا مسئلہ افہام وتفہیم سے حل ہوجانا چاہیے۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں اراکین نے وزیراعظم سے سوال کیا کہ کیا جے یو آئی (ف)سے مذاکرات کےلئے کوئی کمیٹی قائم کی گئی ہے؟ جس پر وزیراعظم نے جواب دیا کہ کمیٹی کے قیام کی فی الحال ضرورت نہیں مگر مذاکرات کا آپشن کھلا ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ کسی کو قانون توڑنے کی اجازت نہیں دے سکتے، انہوں نے کہا کہ اگر کسی نے قانون توڑا تو قانون حرکت میں آئےگا ۔

انہوں نے کہا کہ اگر کوئی خود بات کرنا چاہے تو دروازے بند نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مدرسہ اصلاحات سمیت اہم ایشوز پر کوئی بات کرنا چاہے تو اعتراض نہیں ہے۔اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے دورہ چین پر ارکان کو اعتماد میں لیا۔ اس موقع پر وزیراعظم نے بتایا کہ میرا دورہ چین کامیاب رہا ہے ، مقبوضہ کشمیر مسئلے پر چین ہمارے ساتھ ہے۔


ای پیپر