کم آمدنی افراد کیلئے گھر بنانے کیلئے بجٹ میں بڑا اعلان
11 جون 2021 (17:35) 2021-06-11

اسلام آباد: حکومت نے مالی سال 22-2021  کے بجٹ میں 850سی سی گاڑیوں کو فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی سے چھوٹ اوار مقامی تیار کردہ گاڑیوں پر ویلیو ایڈڈ ٹیکس ختم کر دیا،کم آمدنی والے افراد کیلئے 3 لاکھ روپے تک کی سبسڈی دی جائے گی ۔

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے بجٹ تقریر میں بتایا کہ مقامی طور پر تیار گاڑیوں پر ویلیو ایڈڈ ٹیکس ختم کیا جا رہا ہے۔ پہلے سے بننے والی گاڑیوں اور نئے ماڈل بنانے والوں کو ایڈوانس کسٹم ڈیوٹی سے استثنیٰ دیا جا رہا ہے۔ بجلی سے چلنے والی گاڑیوں کیلئے ایک سال تک کسٹم ڈیوٹی کم کی جا رہی ہے۔ بجٹ میں مقامی طور پر تیار ہیوی موٹرسائیکل ، ٹرک اور ٹریکٹر کی مخصوص اقسام پر ٹیکسوں کی کمی کی تجویز دی گئی ہے۔

بجٹ 2021-22 میں الیکٹرک گاڑیوں کے لیے سیلز ٹیکس کی شرح میں 17 فیصد سے ایک فیصد تک کمی کی تجویز دی گئی ہے۔ اس کے علاوہ 850 سی سی گاڑیوں کو فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی جب کہ درآمد شدہ 850 سی سی تک کی گاڑیوں پر کسٹم اور ریگولیٹری ڈیوٹی پر چھوٹ دی جا رہی ہے۔

بجٹ میں کم آمدنی والے افراد کو بڑی سہولت دیتے ہوئے گھر بنانے کیلئے 3لاکھ روپے تک کی سبسڈی دی جائے گی ،انہوں نے کہا بجٹ میں850 سی سی گاڑیوں کیلئے کسٹم اور ریگولیٹری ڈیوٹی کو بھی ختم کر دیا گیا ہے ،حکومت اس شرح کو کم کرکے پہلے 10 فیصد پھر بعد میں 8 فیصد کرے گی،ٹڈی دل ایمرجنسی اور فوڈ سکیورٹی کیلئے ارب مختص کیے ،آبی گزرگاہوں کی مرمت اوربہتری کیلئے 3ارب روپے مختص کیے گئے ہیں ، آئندہ 2 سال میں 6سے 7 فیصد گروتھ کویقینی بناناچاہتے ہیں، ہرکاشتکارگھرانے کوڈیڑھ لاکھ بلاسودقرض ملے گا


ای پیپر