لٹیروں کی گرفتاری خوش آئند ہے : فواد چوہدری
11 جون 2019 (18:36) 2019-06-11

اسلام آباد : وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ملک لوٹنے والے لٹیروں کی گرفتاری خوش آئند ہے ‘ حمزہ ‘ زرداری گرفتاری کا حکم آزاد عدلیہ نے دیا‘ شریف ‘ زرداری فیملی نے ملک کے اربوں روپے لوٹ کر بیرون ملک منتقل کئے جس کی وجہ سے آج ملکی معیشت سخت دبائو اور غریب عوام کا جینا دوبھر ہوگیا ہے جس کے ذمے دار یہ دو خاندان ہیں۔

پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ نواز شریف اور زرداری پر مقدمات پی ٹی آئی حکومت نے نہیں بنائے بلکہ یہ مقدمات خود انہی دونوں سیاسی پارٹیوں نے ایک دوسرے کو بلیک کرنے کیلئے بنائے تھے۔ ایف آئی اے نے پانچ ہزار جعلی اکائونٹس کا پتہ چلایا جس سے معلوم ہوا کہ یہ تمام پیسہ 31اکائونٹس میں جارہا ہے جو زرداری اور بلاول کے تھے۔ یہ پیسہ زرداری خاندان کا نہیں بلکہ غریب سندھیوں کا تھا جو لوٹ مار کرکے لندن‘ دبئی اور بیرون ممالک غیر قانونی طور پر منتقل کیا جارہا تھا۔ اسی طرح نواز شریف اور حمزہ بھی لوٹ مار میں برابر کے شریک تھے جو پیسہ غربت کے خاتمے کے لئے لگنا چاہئے تھا وہ دونوں خاندانوں کی لوٹ مار میں چلا گیا۔

  فواد چوہدری نے کہا کہ ڈالر کی قیمت میں اضافہ ‘ سٹاک مارکیٹ کیوں تباہ ہوئی‘ غربت میں اضافے کی وجہ کے پیچھے ان دونوں خاندانوں کی لوٹ مار کا ہاتھ تھا۔ مسلم لیگ دور حکومت میں صرف گیس کی مد میں 157ارب روپے کا قرضہ چھوڑا گیا جبکہ بجلی کی مد میں 1207ارب سرکلر ڈیٹ کا خسارہ چھوڑ کر گئے۔ عمران حکومت نے جب حلف اٹھایا تو معلوم ہوا دس ارب ڈالر اسی ماہ واپس کرنے ہیں۔ اب بتایا جائے کہ مہنگائی نہ ہوگی تو کیا ہوگا۔ پاکستان میں اربوں روپے لوٹنے والوں کی گرفتاریاں ہورہی ہیں تو یہ شور مچا رہے ہیں۔ شریف اور زرداری خاندان نے پاکستان کو اپنا گھر نہیں سمجھا بلکہ دشمنوں کی طرح لوٹا۔

فواد چوہدری نے کہا کہ میں ان دونوں پارٹیوں کے سپورٹرز سے کہتا ہوں کہ آپ کس منہ سے ان کی حمایت کررہے ہیں۔ نواز شریف دور میں آصف زرداری کو گرفتار کیا گیا تو ڈیل کی گئی مشرف دور میں نواز شریف کا احتساب نہیں ہوا بلکہ ڈیل ہوئی۔ پی ٹی آئی نے عوام سے مضبوط احتساب کا وعدہ کیا تھا جو عمران خان اور پی ٹی آئی نے اقتدار میں آکر پورا کیا۔ گرفتاریاں سیاسی طور پر نہیں بلکہ میرٹ اور تفتیش پر ہوئیں نواز شریف دور میں زرداری کے خلاف جھوٹے گواہ بنائے گئے اب ٹھوس ثبوتوںکے بعد ملزمان پر ہاتھ ڈالا گیا۔


ای پیپر